تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی نے گھریلو ملازمین کے خلاف پرچہ کٹوادیا

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی نے گھریلو ملازمین کے خلاف پرچہ کٹوادیا

کراچی سے تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی کیپٹن جمیل احمد نےاپنے گھر کے 2 ملازم بھائیوں کے خلاف دھمکیوں اور رقم لے کرفرار ہونے کا مقدمہ درج کروادیا ہے۔

پولیس نے رکن قومی اسمبلی کی جانب سے درخواست پر ملزمان کے خلاف دھوکہ دہی اور دھمکیاں دینے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق جمیل احمد کے پولیٹیکل سیکرٹری آصف کی مدعیت میں کراچی کے تھانہ ملیر کینٹ میں دو بھائیوں اشرف اور افضل کے خلاف مقدمہ درج کروایا گیاہے جس میں کہا گیا ہے کہ ملزمان ایڈوانس تنخواہ لے کر چھٹی پر گئے اور واپس نہ آئے پتہ کرنے پر ملزمان نے جمیل احمد کو خطرناک نتائج کی دھمکیاں دیں۔

خبررساں ادارے نے جمیل احمد اور اس کے ملازم اشرف کے درمیان ٹیلی فون کال کی ریکارڈنگ بھی حاصل کرلی ہے جس میں دونوں کے درمیان پیسوں اور کام پر واپسی سے متعلق بات چیت ہورہی ہے۔

کال پر جمیل خان نے ملازم سے واپسی کے بارے میں استفسار کیا تو اس نے فوری واپسی سے انکار کردیا اور کہا کہ ایڈوانس لیے گئے پیسے ایزی پیسہ کے ذریعے بھجوادیتا ہوں تاہم جمیل احمد اس پر رضامند نہیں ہوتے الٹا اسے دھمکیاں دیتے ہوئے کہتے کہ میں تم پر اور تمہارے باپ پر مقدمہ درج کرواتا ہوں۔

ملزمان کی والدہ کا کہنا ہے کہ جمیل احمد ایک ظالم آدمی ہے وہ میرے بیٹے کو گالیاں دیتا اور ظلم کرتا تھا جس وجہ سے میرا بیٹا اس کی ملازمت چھوڑ کر واپس آگیا تھا۔

مدعی مقدمہ نے موقف اپنایا کہ جنوری کے مہینے میں اشرف نے اپنی شادی کا عذر پیش کرکے 15 ہزار تنخواہ اور 10 ہزار ایڈوانس رقم لے کر چھٹی پر چلا گیا، جب کافی دن گزر جانے کے بعد اس سے رابطہ کیا گیا تو اس نے واپس آنے اور رقم واپس کرنے سے انکار کردیا ۔

اشرف کے بھائی افضل نے جمیل خان کے ساتھ فون پر گالم گلوچ کی اور اسے سنگین نتائج کی دھمکیاں دی جس کے بعد واقعہ کا مقدمہ درج کروانے کیلئے تھانے میں درخواست دی گئی ۔

  • بے شرم 25 ہزار پہ مقدمہ ہی درج کر دیا۔۔۔ کوئی کسی سے 25 ہزار روپے لیتا ہے تو اندازہ کرنا چاہیے کہ وہ کتنا غریب ہوگا۔۔۔؟

    لوگ تو لاکھوں روپے چھوڑ دیتے ہیں یہ خبیث 25 ہزار کے لیے مرا جا رہا ہے۔۔ یہ تو واقعی بہت ظالم لگتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >