نہیں جانتا میرے خلاف کون الزامات لگارہا ہے،جہانگیر ترین

میرے خلاف جھوٹی کہانی بنائی گئی، جھوٹے الزامات لگائے گئے،نہیں جانتا میرے خلاف کون الزامات لگارہا ہے، جہانگیرترین نے ردعمل دے دیا، کہا آٹھ سے دس سال پرانے معاملات پر ایف آئی آر کاٹیں گئیں، باربارشوگرمافیا اورکارٹل کی بات کی جاتی ہے،لیکن تینوں ایف آئی آرز میں چینی کی قیمت بڑھنے کا ذکرنہیں،کارپوریٹ سیکٹر میں ایف آئی کا کوئی کام نہیں، اسے چیلنج کرونگا۔

جوڈیشل کمپلیکس کے باہر میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ سیاست میں آکر کاروبار شروع نہیں کیا،پہلے کاشتکار تھا پھر کاروبار میں آیا،اس کے بعد سیاست میں آیا، میری پاکستان میں ایک نیک نامی ہے،کیسز میں سرخرو ہونگا، انہوں نے کہا کہ مجھ پر ایف آئی آر میں چینی کی قیمت کا کوئی تعلق نہیں۔

دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما راجہ ریاض نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ ہم چالیس بندے ہیں، انصاف دیں،راجا ریاض نے ترپ کے سارے پتے بھی شو کردیئے اورکپتان سے انصاف بھی مانگ لیا،انصاف نہ ملا تو فیصلہ کرنے میں آزاد ہونگے، بات کو مزید آگے نہ بڑھائیں، بڑے تحمل سے تحریک انصاف کے پرچم کے نیچے کھڑے ہیں، آج آخری مرتبہ ریاست مدینہ میں کہہ رہے ہیں کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے،جبکہ اسحاق خاکوانی نے کہا کہ نہ اب انصاف ہے نہ ایمانداری، انہوں نے صحافیوں کو پانچ دن میں بلیک میل کرنے والوں کا نام بتانے کی یقین دہانی کرادی۔

ادھر بینکنگ کورٹ لاہور نے منی لانڈرنگ کیس میں تحریک انصاف کےرہنما جہانگیرترین کی عبوری ضمانت میں تین مئی تک توسیع کردی، بینکنگ جراٸم کورٹ کے جج امیر محمد خان نے کیس کی سماعت کی،ایف آئی اے کے وکیل نےعدالت کو بتایا کہ ہمیں کیس کا ڈیٹا نہیں مل رہا، تفصیلات آنے پر تحقیقات آگے بڑھیں گی۔ عدالت نے ملزمان جہانگیر ترین، علی ترین، رانا نسیم اور علی وارث کی عبوری ضمانت میں تین مئی تک توسیع کردی۔

پیشی پر آنے والے تحریک انصاف کے رہنماؤں اور کارکنوں نے جہانگیر ترین کے ساتھ بھرپور یکجہتی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات بھی دیکھنے میں آئے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>