ڈیڑھ ارب ڈالر کا نیا قرضہ دینے کیلئے ورلڈ بینک کی نئی سخت شرائط کیا؟

ڈیڑھ ارب ڈالر کا قرضہ چاہئے تو بجلی مزید مہنگی کرنا ہوگی، عالمی بینک نے پاکستان کے لیے ایک ارب 50 کروڑ ڈالر مالیت کے نئے قرض کے لیے سخت شرائط بتادیں،بجلی کی قیمتوں میں اضافہ، توانائی اور ٹیکس کے حوالے سے نئی پالیسیوں کو متعارف کروانا ہوگا،قرض کی منظوری کی صورت میں حکومت کو جون میں بجلی کی قیمتوں میں ایک روپے 39 پیسے جبکہ جولائی میں 2 روپے 21 پیسے فی یونٹ اضافہ کرنا ہوگا۔

عالمی بینک کی شرائط آئی ایم ایف پروگرام کا حصہ بھی ہیں،اس حوالے سے تین ہفتے قبل ہی آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان جائزہ اجلاس ہوا اور اب حکومت دوبارہ مذاکرات پر غور کررہی ہے، نومنتخب وزیرخزانہ شوکت ترین نے بھی آئی ایم ایف سے دوبارہ مذاکرات کا اشارہ دے دیا ہے۔

حکومت کو بجلی سپورٹ کی مد میں جون کے اختتام سے قبل 1 ارب 50 کروڑ ڈالر کی ضرورت ہے سابق وزیر خزانہ حماد اظہر ایک اجلاس میں عالمی بینک کے نئے قرض اور اس کی شرائط پر غور کرچکے ہیں۔

ماہرین نے عالمی بینک کی ان شرائط کو خطرے کی گھنٹی قرار دےدیا،ماہرین نے کہا کہ ان شرائط سے حکومت کی مشکلات بڑھ گئی ہیں، کیونکہ حکومت پہلے سے پہلے ہی عالمی مالیاتی فنڈ سے قرض کی نئی قسط کی حصول کی خواہشمند ہے۔

  • hor choopoo….. jitna bekaar ka zor opposition pay lagaya hay agar itna kaam qoum ko educate karnay, economic situation behter krnay aur kuch new mega projects pay lagaya hota tou shayad aj situation kuch behter hoti….. ab Khan saab batana pasand karayn gay k 2018 say pehlay kitna qarza tha aur ab kitna hay? Wohi bogus jawab hoga k ji pehlay walon nay qarza liya howa tha islaye aur lena para, tou yehi jawab pehlay waly bhi day saktay hayn… phir ap mayn aur pehlay walon mayn farq hi kiya hay, unkay dour mayn kam say kam ghareeb 2 waqt ki roti tou kha rha tha na….


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >