سفارتخانے کی ہدایت کے بعد بھی فرانسیسی شہریوں کا پاکستان چھوڑنے سے انکار

سفارتخانے کی ہدایت کے بعد بھی فرانسیسی شہریوں کا پاکستان چھوڑنے سے انکار
پاکستان میں فرانسیسی شہریوں نے سفارت خانے کی جانب سے عارضی طور پر ملک چھوڑنے کی ہدایت ماننے سے انکار کردیا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے فرانس 24 کے مطابق اسلام آباد کے امریکی اسکول میں فرنچ پڑھانے والے ٹیچر نے کہا ہے کہ وہ یہ بات نہیں چھپائیں گے کہ انہیں پہلی بار پاکستان میں خوف اور گھبراہٹ محسوس ہوئی۔ تاہم انہوں نے بتایا کہ ان کے ساتھ موجود پاکستانیوں نے انہیں یہیں رہنے کا مشورہ دیا اور یقین دلایا ہے کہ وہ یہاں موجود ہیں اور اُن کو تحفظ فراہم کریں گے۔

انہوں نے پاکستانیوں کی جانب سے مدد کی یقین دہانی پر خوشی کا اظہار کیا۔ پاکستان میں موجود ایک اور فرانسیسی شہری نے بتایا کہ پاکستان میں رہنے سے بہت سے خدشات ہیں۔ تاہم یہاں موجود فرانسیسی شہریوں کو ایسے نامناسب الفاظ پر مشتمل پیغامات کےذریعے پریشان نہیں کرنا چاہئے۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ حیرت کی بات ہے کہ فرانس نے بین الاقوامی سطح پراس انداز میں یہ پیغام کیوں دیا، جب کسی اور طریقے سے بھی پاکستان میں موجود فرانسیسی شہریوں کو ہدایات دی جاسکتی تھیں۔

ایک اور فرانسیسی شہری نے کہا ہے کہ کیوں کہ سفارت خانے کی جانب سے صرف ہدایات جاری کی گئی ہیں اس لئے وہ پاکستان نہیں چھوڑیں گے۔ انھوں نے یورپ کے کسی دوسرے ملک میں ملازمت اختیار کرنے یا پاکستان میں مسلح گارڈز رکھنے کی پیشکس بھی قبول کرنے سے انکار کیا۔

غیرملکی خبر ایجنسی نے یہ بھی بتایا کہ ایک فرانسیسی شہری نے اپنی کمپنی کے کہنے پر ملک سے جانے کا فیصلہ کیا تاہم ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی شہری بہت اچھے اور یہ ملک شاندار ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق 2 روز قبل پاکستان میں فرانسیسی سفارتخانے نے ملک میں موجود اپنے شہریوں کو ای میل کے ذریعے ہدایت کی کہ پاکستان میں فرانسیسی مفادات کو لاحق سنگین خطرات کے باعث فرانسیسی شہری اور ادارے فوری طور پر عارضی طور پر ملک چھوڑ دیں۔

سفارت خانے کی جانب سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاکستان چھوڑنے کےلیے کمرشل ائیرلائنز کی مدد لی جائے۔

یاد رہے کہ حال ہی میں تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ سعد رضوی کی گرفتاری کے بعد ملک بھر میں مظاہرے اور احتجاج دیکھنے میں آیا، تاہم اب وفاقی کابینہ نے کالعدم تحریک لبیک پر پابندی کی عائد کردی۔ پنجاب حکومت نے کالعدم تحریک لبیک پر پابندی کی سفارش کی تھی۔

وفاقی کابینہ نے وزارتِ داخلہ کی سمری پر انسدادِ دہشت گردی ایکٹ کے تحت پابندی کی منظوری دی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>