ہندو گھرانے سے تعلق رکھنے والی منیشا روپیتا ملک کی پہلی ڈی ایس پی منتخب

سندھ کے شہر جیکب آباد کی رہائشی منیشا روپیتا نے سندھ پبلک سروس کمیشن کا امتحان پاس کرکے ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والی ملک کی پہلی ڈی ایس پی ہونے کا اعزاز حاصل کرلیا ہے۔

خبررساں ادارے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے منیشا روپیتا کا کہنا تھا کہ میرٹ لسٹ میں میرا نمبر 16 ہے اسی لیے مجھے ڈی ایس پی تعینات کیا گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس امتحان کو پاس کرنے کیلئے مجھے دوسروں سے کہیں زیادہ محنت کرنی پڑی تھی کیونکہ مجھے جنرل نالج سمیت دیگر تمام علوم کے حوالے سے زیادہ علم نہیں تھا، کبھی کبھی تو ایسا ہوتا کہ میں پورا دن پڑھائی کے علاوہ کوئی اور کام نہیں کرتی تھی۔

منیشا روپیتا نے میڈیکل کا شعبہ چھوڑ کر پولیس آفیسر بننے کو ترجیح دی ہے، ان کا کہنا تھا کہ وہ بچپن سے ہی کچھ منفرد کرنے کا ارادہ رکھتی تھیں۔

ادب و شاعری سے خصوصی شغف رکھنے والی منیشا روپیتا بطور ڈی ایس پی خدمات سرانجام دینے کیلئے کافی پرجوش ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >