بجلی صارفین کیلئے خوشخبری، 61 پیسے فی یونٹ کمی کا امکان

مہنگائی اور بجلی کے ستائے عوام کو کچھ ریلیف ملنے والا ہے، بجلی صارفین کیلئے نرخوں میں 61 پیسے فی یونٹ کمی کا امکان سامنے آگیا، مسلسل کئی ماہ تک مسلسل اضافے کے بعد واپڈا کی 10 تقسیم کار کمپنیوں کے صارفین کے لیے مارچ میں ماہانہ ایندھن کی لاگت کی ایڈجسمنٹ کے تحت بجلی کے نرخوں میں 61 پیسے فی یونٹ کمی کردی گئی ہے۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی 28 اپریل کو نرخوں میں کمی کی درخواست پر عوامی سماعت کرے گی،ریگولیٹر سے منظوری ملنے کے بعد ایندھن کی کم لاگت کو صارفین کے مئی کے بلز میں ایڈجسٹ کیا جائے گا۔

سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی نے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کی جانب سے بہتر توانائی کی پیداوار کا فائدہ صارفین کو پہنچانے کے لیے 61 پیسے فی یونٹ کمی کامطالبہ کردیا،حکام کا کہنا تھا کہ طویل عرصے سے بجلی کی کمپنیاں خود ہی نرخوں میں کمی کی درخواست کر رہی ہیں،ایندھن کی لاگت پر نرخوں کی کمی گزشتہ سال ہونی تھی لیکن قیمتیں 3 سہ ماہی تک تبدیل نہیں ہوئیں۔

منظوری ملنے کے بعد بجلی کے نرخوں میں کمی 300 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے اور زرعی صارفین کو فائدہ نہیں پہنچائے گی کیوں کہ پہلے ہی سبسڈائز نرخوں سے فائدہ اٹھارہے ہیں جبکہ نرخوں میں اس کمی کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین پر بھی نہیں ہوگا۔

سی پی پی اے کے مطابق مارچ میں صارفین سے ریفرنس فیول ٹیرف کے لیے 5 روپے 32 پیسے فی یونٹ وصول کیے جبکہ ایندھن کی لاگت 5 روپے 61 پیسے فی یونٹ تھی ،61 پیسے فی یونٹ کو صارفین کے آئندہ ماہ بجلی کے بلز میں ایڈجسٹ کیا جائے گا،مارچ میں تمام ذرائع سے بجلی کی پیداوار 8 ہزار 965 گیگا واٹس آور ریکارڈ کی گئی جس کی لاگت 5 روپے 55 پیسے فی یونٹ کی اوسد قیمت پر 49 ارب 70 کروڑ روپے تھی، 8 ہزار 614 گیگا واٹس آور بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو 5 روپے 61 پیسے فی یونٹ کے اوسط نرخ پر 48 ارب 37 کروڑ روپے میں دیے گئے۔

اعداد و شمار کے مطابق پن بجلی کی پیداوار نے مجموعی توانائی کے مرکب میں 19.4 فیصد شامل کیے جس کی مقدار جنوری میں 13 فیصد اور فروری میں 28 فیصد تھی۔
مارچ کے دوران کوئلے سے پیدا ہونے والی بجلی کا حصہ معمولی اضافے کے ساتھ 30.5 فیصد رہا جو جنوری میں 32 اور فروری میں 26 فیصد تھا،ٹیرف میکانزم کے تحت ایندھن کی لاگت میں ہونےوالی تبدیلیوں کو ایک خود کار طریقہ کار کے تحت ماہانہ بنیاد پر صارفین کو منتقل کیا جاتا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>