کورونا وائرس کی بگڑتی ہوئی صورتحال، آکسیجن کی قمیت تین گنا اضافہ

ملک میں کورونا وائرس کی تیسری لہر کے باعث صورتحال دن بدن بگڑ رہی ہے جس کی وجہ سے آکسیجن سلنڈر کی طلب میں بھی اضافہ ہو رہا ہے تاہم ڈیلرز نے آکسیجن کی قمیت تین گناتک کا اضافہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق آکسیجن کی بڑھتی ہوئی طلب کے باعث فیکٹری سے 13روپے فی لیٹر ملنے والی آکسیجن50روپے فی لیٹر بیچی جارہی ہے۔

آکسیجن کی قیمتوں کے بارے میں صنعتکاروں کا کہنا ہے کہ کمپنیاں اور ڈپومنافع خوری میں ملوث نہیں، فیکٹری سےآکسیجن لانےمیں بہت خرچہ ہے جس کے باعث قیمتیں بڑھی ہیں۔

دوسری جانب فیکٹری مالکان اور ڈپو مینجرز کےمطابق ملک میں آکسیجن وافر مقدار میں موجود ہےاور اس کی قیمت میں قابل ذکر اضافہ نہیں ہوا۔

چیف ایگزیکٹو گیس کمپنی عتیق الرحمان کے مطابق گیس کی قیمت بڑھی نہیں ہے، ڈيلر کی سطح پر قيمتيں بڑھائی گئی ہيں جبکہ پاکستان ميں يوميہ 700ٹن گيس پيدا ہوتی ہے۔

ڈپو مینجر محمد دانش کا کہنا ہے کہ ہم 47 لیٹر کا سلنڈر 600روپے میں بھرکر دیتے ہیں جبکہ صرف کمپنیاں لاہور کے ہی ریجن میں 15ہزار کے قریب سلنڈرز فراہم کر رہی ہیں۔

واضح رہے کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے بتایا ہے کہ 1 دن میں مزید 108 افراد کرونا وائرس کے باعث انتقال کرگئے۔ان میں سے 37 مریضوں کا انتقال وینٹیلیٹر پر ہوا۔

جمعرات کو این سی او سی نے بتایا ہے کہ 24 گھنٹوں میں 4 ہزار 198 نئے کرونا کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک میں کرونا کے مثبت کیسز کی شرح 9.03 فیصد ہے۔وائرس کے باعث سب سے زیادہ پنجاب میں 68 اموات،خیبرپختونخوا میں 31 اموات ہوئیں۔ سندھ 4 ، اسلام آباد 1، بلوچستان 1، آزاد کشمیر میں 3 اموات ہوئیں۔ کرونا سے مجموعی اموات کی تعداد 18 ہزار 537 ہوگئی ہے۔

  • اسلام زندہ باد
    آخر منافع خوروں نے عمرے بھی کرنے ہیں حج بھی
    لوٹ مار نہیں کریں گے تو حج عمرہ کا خرچہ کیسے پورا ہوگا

  • حکومت کہاں ہے؟؟ یاد ہے شہباز شریف نے ڈینگی ٹیسٹ کی قیمت سو روپے مقرر کی تھی اور اس پر عملدرآمد بھی کرکے دکھایا تھا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >