پنجاب میں اسٹامپ پیپر ختم کرنے کا فیصلہ، سادہ کاغذ استعمال ہوگا

پنجاب حکومت نے صوبے میں اسٹامپ پیپرز کے استعمال کو مکمل طور پر ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے بعد جائیداد کی رجسٹری کیلئے سادہ کاغذ کو استعمال کیا جائے گا۔

خبررساں ادارے نے اپنی رپورٹ میں پنجاب بورڈ آف ریونیو کے رکن بابر حیات تارڑ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ جائیداد کی رجسٹری کیلئےسادہ کاغذ استعمال کیا جائے گاجس پر تین بار کوڈ لگے ہوں گے۔

بابرحیات تارڑ کا کہنا تھا کہ اس فیصلے کا اطلاق رواں سال سے ہی ہوجائے گا، اسٹامپ پیپرز کے خاتمے سے حکومت کو ایک ارب روپے سے زیادہ کی بچت ہونے کا امکان ہے جبکہ رجسٹری کرنیوالا افسر اسکا ٹرانسفر بھی درج کردے گا

زمین ٹرانسفر اور دیگر معاملات کو مزید فعال بنانے کیلئے تمام پٹوار خانوں کو سرکاری عمارتوں میں منتقل ہونے کا حکم دیدیا گیا ہے ۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ صوبے میں ریکوری کے نظام کو مزید فعال بنارہے ہیں، حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ زرعی انکم ٹیکس اور آبیانہ ادا نہ کرنے والوں کو گرفتار کیا جائے اور انہیں ہر تحصیل میں قائم کردہ حوالات میں 15 دن کیلئے قید کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ پاکستان اور بھارت میں قیام پاکستان سے آج تک سٹامپ پیپرز استعمال ہورہے ہیں۔ جبکہ بھارت میں اکثر جعلی سٹامپ پیپرز کی شکایات بھی سامنے آتی ہیں۔

  • مجھے یہ سمجھ نہیں آ رہی کہ سٹیمپ پیپر کے خاتمے سے حکومت کو ایک ارب روپے کی بچت
    کیسے ہو گی؟….حکومت کو تو نقصان ہونا چاہئیے

  • پنجاب حکومت پہلے ہی مشین ریڈ ایبل اسٹامپ پیپر بنا رہی ہے جن پر دو بار کوڈ لگے ہوتے ہیں ، حکومت تین بار کوڈ اسی اسٹامپ پیپر پر لگا لے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >