جرنلسٹ پروٹیکشن ایکٹ منظور،صحافیوں سے ذرائع پوچھنے پر پابندی ہوگی،فواد چوہدری

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ جرنلسٹ پروٹیکشن ایکٹ کے تحت صحافیوں سے اب ذرائع سے متعلق سوال نہیں کیا جاسکے گا۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فواد چوہدری نے مشیر تجارت رزاق داؤد کے ہمراہ اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس کی جس میں ان کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ نے جرنلسٹ پروٹیکشن ایکٹ کی منظوری دیدی ہے۔

جرنلسٹ پروٹیکشن ایکٹ منظور،صحافیوں سے ذرائع پوچھنے پر پابندی ہوگی،فواد چوہدری

انہوں نے مزید کہا کہ اس ایکٹ کے تحت دوران ڈیوٹی صحافیوں کو پیش آنے والے کسی حادثے کے نتیجے میں انہیں پروٹیکشن دی جائے گی، اور صحافیوں سے خبر کے ذرائع سے متعلق ہونے والے سوالات بھی نہیں ہوسکیں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے دورہ سعودیہ سے متعلق بھی گفتگو کی اور کہا کہ اس دورے سے دونوں ملکوں کے تعلقات میں بہتری آئے گی ، عمران خان کی خواہش ہے کہ ایران اور عرب ممالک میں بہتر تعلقات استوار ہوجائیں۔

  • That is fair. But what about fake news. There should be some license/record for journalists which list their fake news stories just like drivers license has a list of offenses.

  • جھوٹی خبروں پر یقیناً میڈیا اور صحافیوں کے خلاف سخت سے سخت جرمانے اور ایکشن لیا جائے کیونکہ فتنے جھوٹ پیھلانے بہت بڑے گناہوں میں آتا ھے

  • PTI supporters need to understand that, all over the world, Journalists use unnamed sources to break important news from power corridors. But, PTI supporters frequently say that “Kia yeh journalist table kay neechay chhupa howa tha? Kia PM and COAS nay iss kay kaan mein bataya tha? etc”. All these statements are rubbish statements and are an attempt to divert attention from the issue being discussed.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >