نیب کی جانب سے شہباز سمیت دیگر ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش

نیب کی جانب سے شہباز سمیت دیگر ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش

نیب لاہور کی جانب سے منی لانڈرنگ ریفرنس کے مرکزی ملزم شہباز شریف اور دیگر تمام شریک ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا سفارش کردی گئی، اس حوالےسے لیٹر منظر عام پر آگیا۔

لیٹر 28 اپریل 2021 کو نیب ہیڈکوارٹرز کو بھیجا گیا، لیٹر میں سپریم کورٹ میں لاہور ہائیکورٹ کی ای سی ایل میں ملزمان کے نام شامل نہ کرنیکی رولنگ کو چیلنج کرنے کی درخواست بھی کی گئی۔

لیٹر میں کہا گیا کہ ملزم کیخلاف ٹھوس شواہد پر مبنی ریفرنس 20 اگست 2020 کو احتساب عدالت لاہور کے روبرو دائر ہوا، جس پر عدالتی کارروائی جاری ہے،نیب کی جانب سے معزز سپریم کورٹ سے استدعا کی جائے کہ ملزم شہباز شریف کی احتساب عدالت میں زیر سماعت ٹرائل میں موجودگی انتہائی ضروری ہے۔

منی لانڈرنگ ریفرنس کے مرکزی ملزم شہباز شریف و دیگر ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں،شہباز شریف کی لاہور ہائی کورٹ سے ضمانت کے حالیہ تفصیلی فیصلہ کے بعد نیب کیجانب سے اگلے ممکنہ لائحہ عمل پر مشاورت بھی جاری ہے۔

تین روز قبل لاہور ایئرپورٹ پر امیگریشن حکام نے پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور قائد حزبِ اختلاف شہباز شریف کو ان کا ‘نام تاحال بلیک لسٹ’ میں ہونے کے سبب بیرونِ ملک سفر کرنے سے روک دیا تھا،شہباز شریف کو سفری اجازت نہ ملنے پر وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا تھا کہ عدالت کا فیصلہ کسی نے ایف آئی اے کو نہیں دیا اور صرف زبانی کہنے سے تو نام بلیک لسٹ سے نہیں نکالے جا سکتے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>