بلاول کا وزیر اعظم کو سعودی امداد کا طعنہ مگر سندھ حکومت بھی بینیفشری نکلی

بلاول کا وزیر اعظم کو سعودی امداد کا طعنہ مگر سندھ حکومت بھی بینیفشری نکلی

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری وزیراعظم عمران خان پر مبینہ طور پر  سعودی عرب سے زکوۃ الفطر کی امداد لینے پر تنقید کرتے ہوئے یہ بھول  گئے کہ ان کی اپنی  سندھ حکومت بھی اسی امدادی پروگرام سے مستفید ہوتی رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق  جس  "کے ایس ریلیف” پروگرام  کے حوالے سے  بلاول بھٹو زرداری نے  وزیراعظم عمران خان پر تنقید کے نشتر برسائے  انہیں علم نہیں تھا کہ اس پروگرام سے سندھ بھی مستفید ہورہا ہے اور یہ پروگرام وزیراعظم کے دورہ سعودیہ کے دوران نہیں بلکہ اس سے قبل پاکستان میں سعودی سفارت خانے نے شروع کیا تھا۔

کے ایس ریلیف پروگرام کے تحت پاکستان بھر میں بشمول بلوچستان اور سندھ کے لاکھوں غریب افراد میں   راشن کے تھیلے تقسیم کیے جارہے ہیں، اسی پروگرام کے تحت سندھ کے 7 اضلاع میں 7000 تھیلے تقسیم کیے  گئے۔

جن اضلاع میں یہ راشن تقسیم کیا گیا ان میں خصوصی توجہ لاڑکانہ کو دی گئی جبکہ سانگھڑ، بدین ، میرپور خاص، عمر کوٹ  اور تھرپارکر بھی مستفید ہونے والے اضلاع میں شامل ہیں۔

بلاول کا وزیر اعظم کو سعودی امداد کا طعنہ مگر سندھ حکومت بھی بینیفشری نکلی

بلاول بھٹو زرداری نے حقیقت جانے بغیر وزیراعظم عمران خان پر تنقید کے نشتر برسائے اور  کہا کہ دورہ سعودی عرب سے وزیرِ اعظم عمران خان نے چاول کے 19 ہزار تھیلوں کے علاوہ کیا کامیابی حاصل کی؟

انہوں نے مزید کہا تھا کہ دورے کے اخراجات کا زکوٰۃ کی مد میں حاصل ہونے والے چاولوں کے تھیلوں کی قیمت سے موازنہ کیا جائے۔پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ عمران خان کی 22 سالہ جدوجہد ایٹمی ملک کو زکوٰۃ کے چاول کے لائق بنانے کیلئے تھی۔

  • لڑوکانے کے بھونکنے والے کتو ، چاول ہی سہی ، اپنے ملک میں غریبوں کے پیٹ میں خوراک کا دانہ تو لے آیا ، تم لوگ سوُر کی اولادو، تھر اور سندھ میں شیر خوار بچوں کا دودھ اور غریبوں کے حصے کی خوراک بیچ کے کھا چکے ہو


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >