شہید بیٹے کی یاد میں14سال سے زیرالتوا ہسپتال کا معاملہ،میجر صدیق کی کال پر ایکشن

شہید بیٹے کے نام پر 14سال سے زیرالتوا ہسپتال کا معاملہ،میجر صدیق کی کال پر ایکشن

سرائے عالمگیر کے پسماندہ علاقے سے تعلق رکھنے والے پاک فوج کے ریٹائرڈ میجر صدیق نے اپنے علاقے میں بیٹے کی یاد میں ہسپتال کے قیام کا معاملہ وزیراعظم عمران خان کے سپرد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ دنوں  وزیراعظم عمران خان کی جانب سے عوام کے براہ راست رابطے کے دوران میجر (ر)صدیق نے وزیراعظم کو فون کرکے بتایا کہ میرا بیٹا میجر پرویز صدیق بلوچستان میں ایک آپریشن کے دوران شہید ہوگیا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ بیٹے کی شہادت کے بعد میں نے اس کی یاد میں اپنے علاقے میں 32 کنال زرعی زمین  محکمہ ہیلتھ پنجاب کے نام منتقل کردی کہ اس زمین پر ایک ہسپتال بنایا جائے کیونکہ ہمارے پسماندہ علاقے میں کوئی اچھا ہسپتال نہیں تھا۔

میجر (ر)صدیق کا کہنا تھا کہ 14 برس گزر گئے میں کوشش کرتا رہا مگر ہسپتال کا قیام عمل میں نہ آسکا  پھر میں نے فیصلہ کیا کہ میں اس حوالے سے اپنے وزیراعظم عمران خان سے بات کروں گا جو کہ مخلص بھی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میں نے وزیراعظم کو فون کرکے  سارا مدعہ بتایا جس کے بعد  مجھے وزیراعظم آفس کی طرف سے رسپانس موصول ہوا، میں اس پر بہت مطمئن ہوں، مجھے امید ہے کہ اب میرے شہید بیٹے کی یادگار کے طور پر اس علاقے میں ایک ہسپتال ضرور بن جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >