سمندری طوفان کا رخ بدل گیا، کراچی میں طوفانی بارش کا امکان ختم

سمندری طوفان تاؤ کا خطرہ پاکستان سے ٹل گیا، سمندری طوفان کا رخ تبدیل ہوگیا، طوفان تاؤ بھارتی ریاست گجرات کی طرف بڑھنا شروع ہوگیا، محکمہ موسمیات کے مطابق پاکستان کے ساحلوں کو طوفان سے زیادہ خطرہ نہیں رہا، 17 سے 20 مئی تک سمندر میں طغیانی کی کیفیت رہے گی۔

سمندری طوفان کراچی کے جنوب اور جنوب مشرق سے1220کلومیٹر کے فاصلے پر ہے، کراچی میں گرمی بڑھے گی ،پارہ 40 ڈگری تک جانے کا امکان ہے،18 مئی کو 35 کلومیٹر فی گھنٹے کی رفتار سے گرد آلود ہوائیں چلیں گی۔

طوفان کے مرکز میں ہواؤں کی رفتار 100 سے 120 کلو میٹر فی گھنٹہ ہے،محکمہ موسمیات کے مطابق ٹھٹھہ، بدین ، تھر، میر پورخاص، عمرکوٹ اور سانگھڑ میں بارش ہوسکتی ہے، جبکہ اس دوران ہوا کی رفتار 60سے80 کلو میٹرتک ہونے کاامکان ہے۔

سمندرمیں طوفان کے باعث حیدرآباد، جام شورو، بینظیر آباد میں 18تا 20 مئی بارش اور گردآلودہوائیں چلیں گی، سکھر ، لاڑکانہ، شکار پور، جیکب آباد، دادو بھی شامل ہیں۔ 17سے 20 مئی تک سسٹم کے تحت سمندر میں طغیانی کی کیفیت رہے گی جس کے سبب ماہی گیروں کو16 سے 20 مئی تک گہرے سمندر میں نہ جانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

بحیرہ عرب میں بننے والے سمندری طوفان تاؤ کے بھارت میں شدید وار جاری ہیں۔ طوفان گوا سے ٹکرا گیا،مختلف علاقوں میں تیز ہواؤں کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری ہے،نظام درہم برہم ہوگیا، بجلی بھی معطل ہوگئی،ریاست کیرالا، کرناٹک، تامل ناڈو، گجرات اور مہاراشٹرا بھی طوفان کی زد میں ہیں، کیرالا میں موسلا دھار بارش نے تباہی مچادی،طوفان کی شدت میں آئندہ بارہ گھنٹے میں مزید اضافے کا امکان ہے،طوفان تاؤ کا کل ریاست گجرات سے ٹکرانے کا امکان ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>