توہین مذہب کے مبینہ ملزم کی حوالگی کیلئے مشتعل ہجوم کا پولیس اسٹیشن پر حملہ

 

توہین مذہب کے مبینہ ملزم کی حوالگی کیلئے مشتعل ہجوم کا پولیس اسٹیشن پر حملہ

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں مشتعل ہجوم نے مبینہ طور پر توہین مذہب کے مرتکب ہونے والے ملزم کو خود سزا دینے کیلئے گولڑہ پولیس اسٹیشن پر حملہ کردیا اور پتھراؤ کیا۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ میں پولیس ذرائع کا حوالہ دے کر بتایا گیا ہے کہ مشتعل ہجوم ڈنڈوں ، لوہے کی سلاخوں اور پتھروں کے ہمراہ پولیس اسٹیشن پہنچا اور انہوں نے تھانے پر حملہ کردیا۔

ہجوم نے پولیس اسٹیشن میں داخل ہوکر محرر، انویسٹی گیشن آفیسرز اور ایس ایچ او کے دفاتر میں پہنچ کر توڑ پھوڑ کی ، جس کے بعد کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ، اینٹی ٹیررازم سکواڈ اور دیگر قانون نافذ کرنے والے محکموں کی نفری نے تھانے پہنچ کر ہجوم کو تھانے سے باہر نکال کر عملے کو ریسکیو کیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گولڑہ بستی کے رہائشی کی جانب سے مبینہ طور پر مذہبی شخصیات کے بارے میں توہین آمیز گفتگو کرنے، مسجد کے باہر لگے مذہبی بینرز پھاڑنے اور مسجد کے مولوی سے گالم گلوچ کرنے پر علاقہ مکینوں نے اسے پکڑ لیا اور مار پیٹ کا نشانہ بنایا۔

گولڑہ تھانے کی پولیس نے موقع پر پہنچ کر ملزم کو بچایا اور اپنے ساتھ تھانے لے گئی، علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد بھی پولیس کے پیچھے تھانے پہنچی، پولیس نے تھانے پہنچ کر ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرلیا مگر ایک مشتعل جتھہ پولیس سے مسلسل ملزم کی حوالگی کیلئے الجھ رہا تھا، جب ان کی بات نہیں سنی گئی تو انہوں نے تھانے پر حملہ کردیا اور پتھراؤ کیا جس سے تھانے کی کھڑکیاں دروازے ٹوٹ گئے۔

پولیس نے ہجوم کو منتشرکرنے کیلئے لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کا استعمال کیا، واقعے میں ایک پولیس اہلکار زخمی بھی ہوا، قانون ہاتھ میں لینے اور کار سرکار میں مداخلت کرنے پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملوث افراد کو گرفتار  کرلیا ہے۔

    • ایک طرف ایک قانون کا کالا کہتے ہو دوسری طرف قانون کے مطابق سزا کی بات کرتے ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔ یعنی اگر تمھاری میری پسند میں قانون کالے چٹے ہیں تو کس قانون کے مطابق سزا ہونی چاہیے اپنے چٹے قانوںوں کی فہرست بھی جاری کر دو

  • ان ملاوں کی کذب بیانی ظاہر ہوگئ جو کہتے تھے کہ ضیا کا بنایا گیا قانون ہی انصاف دے سکے گا اور اس قانون کی غیر موجودگی میں ہجوم خد سزا دینے پر اتر آے گا۔ سب بکوا س اور جھوٹ تھی اصل مدعا یہ ہے کہ قانون شکنوں اور جھوٹے کیس کروانے والوں کو آج تک سزا ہی نہیں دی گئی


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >