پاکستان میں پولیو مہم کو امریکہ نے بدترین نقصان پہنچایا،یورپی تحقیق میں انکشاف

 پاکستان میں پولیو مہم کو امریکہ نے بدترین نقصان پہنچایا،یورپی تحقیق میں انکشاف

ایک یورپی تحقیق میں انکشاف کیا گیا ہے کہ 2011 میں امریکی سی آئی اے نے اُسامہ بن لادن تک پہنچنے کےلیے اپنی جعلی پولیو مہم چلائی تھی جس کی وجہ سے پاکستان میں پولیو ویکسینیشن پروگرام کو بدترین نقصان پہنچا۔

تفصیلات کے مطابق جرنل آف دی یورپین اکنامک ایسوسی ایشن کے تازہ شمارے میں ایک تحقیق شائع ہوئی ہے جس میں یہ دعوی کیا گیا ہے۔ تحقیق میں اسپین اور برطانیہ کے دو ماہرین نے دس سالہ اعداد و شمار کی بنیاد پر بتایا ہے کہ پاکستان میں اسلام پسندوں کی اکثریتی آبادی والے علاقوں میں پولیو ویکسی نیشن کی شرح میں 39 فیصد تک کمی آچکی ہے۔

حالیہ برسوں میں پولیو ویکسین کی شرح میں کمی کی ایک بڑی وجہ ویکسین کے خلاف اسلام پسند لوگوں کی بڑی تعداد کا پولیو کارکنان کو ’’خفیہ جاسوس تنظیموں کا نمائندہ‘‘ سمجھنا ہے۔ تحقیق کے مطابق ان شبہات کے حق میں اُس جعلی پولیو مہم کو بطور ثبوت پیش کیا جاتا ہے جو 2011 میں امریکی سی آئی اے نے اسامہ بن لادن کو پکڑنے کےلیے انجام دی تھی۔

تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا کہ اس جعلی پولیو مہم کےلیے سی آئی اے نے مقامی ڈاکٹر شکیل آفریدی کا استعمال کیا تھا۔ تحقیق کے ماہرین کا کہنا ہے کہ پولیو کارکنان اور انتظامی اہلکاروں کا شدت پسندوں کے ہاتھوں قتل اور زخمی ہونے والے واقعات کے پیچھے بھی یہی سوچ کار فرما ہے۔

جولائی 2011 میں اس بات کے انکشاف پر دنیا بھر کے طبّی حلقوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ایسے واقعات آئندہ نہ ہونے کی یقین دہانی کروائی جائے۔

واضح رہے کہ اس تحقیق سے قبل مئی 2013 میں امریکا کے معتبر سائنسی جریدے ’’سائنٹفک امریکن‘‘ کے ادارتی بورڈ نے اپنی ایک مشترکہ تحریر میں امریکی حکومت کو شدید ترین تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سی آئی اے کی اس حرکت نے دنیا بھر میں پولیو ویکسی نیشن پروگرام کو 25 سال پیچھے پہنچا دیا ہے۔

    • پاکستانی حرامخور اسٹبلشمنٹ کے کتے کسی امریکی کتے کو ہاتھ نہیں لگا سکتے انسان تو بڑی دور کی بات ہے۔۔۔ حالانکہ شکیل آفریدی اور کلبوشن یادیو کو تو کب کا پھانسی پہ چڑھا دینا چاہیے تھا۔۔۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >