لوڈشیڈنگ کی وجہ صلاحیت یا پیداوار میں کمی بالکل نہیں،وفاقی وزیر توانائی کی وضاحت

وفاقی وزیر توانائی نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر وضاحت دیدی

وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے ملک بھر میں گزشتہ 48 گھنٹوں میں ہونے والی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر وضاحت دیدی ہے۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ ایک پیغام میں حماد اظہر کا کہنا تھا کہ چند ہائیڈل اور تھرمل پلانٹس کی ٹیکنیکل وجوہات کی بنا پر بندش کے باعث ملک میں 1 ہزار میگاواٹ کا شارٹ فال پیدا ہوا جس کی وجہ سے ملک میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ شروع ہوگئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ہونے والی لوڈ شیڈنگ پر آج رات تک قابو پالیا جائے گا ، جس کیلئے متبادل ذرائع سے سسٹم میں 1100 میگاواٹ بجلی مہیا کرنے کی کوششیں کی گئیں۔

حماد اظہر نے کہا کہ اگلے 4 سے 6 روز میں تربیلا پاور پلانٹ سے 3 ہزار میگاواٹ بجلی بھی سسٹم میں دوبارہ سسٹم میں شامل ہوجائی گی۔

اپنے ایک ویڈیو پیغام میں حماد اظہر کا کہنا تھا کہ میں واضح کردینا چاہتا ہوں کہ اس لوڈشیڈنگ کی وجہ صلاحیت یا پیداوار میں کمی بالکل نہیں ہے، ہمارے پاس پورا سال ہماری طلب سے زیادہ کیپیسٹی ہوتی ہے، پورا سال ہزاروں میگاواٹ بجلی ہمارے استعمال میں بھی نہیں آتی۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں کیے گئے معاہدوں کی وجہ سے ہمیں ان غیر استعمال شدہ میگاواٹ بجلی کی مد میں مکمل رقم کرایہ کے طور پر ادا کرنی پڑتی ہے۔

اس سے قبل وزارت توانائی کے آفیشل ٹویٹر ہینڈل سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا تھا کہ تربیلا ڈیم میں پانی کے اخراج میں کمی کے باعث پیداوار میں 3ہزار میگاواٹ کی کمی واقع ہوئی، انشااللہ آنے والے دنوں میں اس کمی کو پورا کرلیا جائے گا۔

وزارت توانائی نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر معذرت کرتے ہوئے کہا کہ سسٹم کی حفاظت کیلئے کی جانے والی لوڈ مینجمنٹ سے کی وجہ سے صارفین سے معذرت خواہ ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران گرمی کی شدت میں شدید اضافے کے بعد ملک کے مختلف شہروں میں 6 سے 12 گھنٹوں تک لوڈ شیڈنگ شروع ہوگئی ہے ، جس کی وجہ بجلی کی طلب اور پیداوار کا فرق بتایا جارہا ہے، پاور ڈویژن کے مطابق بجلی کا شارٹ فال924 میگاواٹ ہے جو آج رات تک ختم کردیا جائے گا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>