لوڈشیڈنگ: شہباز شریف اور حماد اظہر کے درمیان ٹویٹر پر لفظی جھڑپ

گزشتہ 48 گھنٹوں کےدوران ملک کے مختلف علاقوں میں ہونے والی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر اپوزیشن کی تنقید اور حکومت کی وضاحتوں کا سلسلہ جاری ہے، ایسے میں قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف اور وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر میں ٹویٹر پر لفظی جنگ چھڑ گئی ہے۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے 6 سے 12 گھنٹوں کی بدترین لوڈشیڈنگ کی بنا پر حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ لوڈشیڈنگ موجودہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کا مظہر ہے۔

شہباز شریف نے 2 روز قبل بجلی کے بحران پر اپنی ایک ٹویٹ میں دعویٰ کیا کہ آج ملک میں بجلی کی طلب 25ہزار میگاواٹ جبکہ پیداوار صرف16 ہزار میگاواٹ رہی، 2018 میں ہم نے 27 ہزار میگاواٹ بجلی بنائی اور اس کی ترسیل کو بھی ممکن بنایا ، سوال یہ ہے کہ پیداواری اور ترسیلی صلاحیت ہونے کے باوجود لوڈشیڈنگ کی وجہ کیا ہے؟۔

حماد اظہر نے اس ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے طنز کیا اور اسے جھوٹےاعدادوشمار قراردیدیا۔

شہباز شریف نے آج پھر حکومتی ایوانوں کو تنقید کا نشانہ بنانے کیلئے ٹویٹر کا محاذ سنبھالااور اپنی سلسلہ وار ٹویٹس میں کہا کہ ہم نے وافر بجلی پیدا کی، ترسیل و تقسیم کا بہتر نظام قائم کرکے ملک سے لوڈشیڈنگ ختم کی، پی ٹی آئی حکومت نے بجائے منصوبوں کی توسیع کرنے کے الٹا ہماری حکومت پر الزام لگایا کہ ہم نے اتنی بجلی پیدا کردی جس کی ملک کو ضرورت نہیں تھی۔

شہباز شریف نے مزید کہا کہ اب گرمیوں میں حکومت کی منصوبہ بندی اور انتظامات کی ناکامی سے بدترین لوڈ شیڈنگ ہورہی ہے، حکومت کے پیدا کردہ معاشی جمود کی وجہ سے بجلی کی طلب میں اضافہ نہیں ہورہا، اور نااہلی کا عالم یہ ہے کہ کم طلب کو بھی پورا نہیں کررپارہے۔

وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے شہباز شریف کی اس تنقید کا جواب دیتے ہوئے اپنی ٹویٹ میں کہا کہ بجلی کی کھپت میں گزشتہ سال کی نسبت 6 فیصد اضافہ ہوا ، کے الیکٹرک کو 550 میگاواٹ اضافی بھی وفاقی حکومت کی جانب سے فراہم کیے جارہے ہیں۔

انہوں نے شہباز شریف پر جوابی وار کرتے ہوئے کہا کہ آپ یہ بتائیں کہ جناب اتنے مہنگے سودے کیوں کیے او ر ٹرانسمیشن کے نظام کو یکسر نظر انداز کردیا۔

انہوں نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ کا آدھا مسئلہ دودن میں بہتر ہوچکا ہے باقی انشااللہ کل تک ہوجائے گا۔

اپنی ایک دوسری ٹویٹ میں حماد اظہر کا کہنا تھا کہ ہم بجلی کی طلب میں گزشتہ برس کے مقابلے میں15 سے 20 فیصد تک اضافہ دیکھ رہے ہیں، ہم نے نیشنل گرڈ میں آج 1200 میگاواٹ بجلی شامل کی مزید 1000 میگاواٹ بجلی کل تک سسٹم میں شامل ہوجائے گی جس سے بحران پر تقریبا قابو پالیا جائےگا ۔

واضح رہے کہ گزشتہ 48 گھنٹوں کے دوران گرمی کی شدت میں شدید اضافے کے بعد ملک کے مختلف شہروں میں 6 سے 12 گھنٹوں تک لوڈ شیڈنگ شروع ہوگئی ہے ، جس کی وجہ بجلی کی طلب اور پیداوار کا فرق بتایا جارہا ہے، پاور ڈویژن کے مطابق بجلی کا شارٹ فال924 میگاواٹ ہے جو آج رات تک ختم کردیا جائے گا۔

  • یہ بد زات نسل حرامی نواز شریف کا ٹبر امرتسری کنجر دلے ہاراں والے کے حرامی اولاد وہ گھٹیا نیچ اور بے غیرت احسان فراموش فراڈئے ہیں کہ جب یہ فٹ پاتھ پر آگئے تھے تو حماد اظہر کے باپ میں اظہر نے ان کنجروں کو پناہ دی تھی اپنی فیکڑی اور پیسہ بھی مگر حرامی نواز شریف بٹ نے احسان فراموشی کی تھی

  • زرداری اور بلاول وہ بدبخت ہیں جو
    اس عوام کے خون پر پلے ہوے ہیں
    ان کتوں سے خیر کی بات کی امید بھی گناہ ہے
    کاش اعوان صاحبہ جاوید چودری اور ان دونوں کی آنکھوں
    میں برف والا سوا مارتی
    سواد ا جاتا

  • ویسے اگر احمقوں کے سر پر سینگ ہوتے تو پی ٹی آئی والے یوتھیے بارہ سنگھے ہوتے۔ عجیب سی بات ہے کہ جب ن-لیگ کے "معاشی دہشتگردوں” نے بجلی کے مہنگے منصوبے لگائے اور ان کی اکثریت مکمل بھی کی تب بجلی سستی بھی تھی۔ اور ترسیل کا یہی نظام ہونے کے باوجود لوڈشیڈنگ بھی کم و بیش ختم ہو گئی تھی۔ لیکن جب ایماندار محب وطنوں کی حکومت مسلط کی گئی تو وہی سارا ترسیل کا نظام بھی خراب ہو گیا، جس کی وجہ سے لوڈشیڈنگ بڑھ گئی اور بجلی کوئی تین گنا تک مہنگی بھی ہو گئی۔ سچ کہتے ہیں کہ نیت خراب تو حیلے ہزار۔

    نوٹ: اس کمنٹ پر رپلائی کرنے والے اپنی ماؤں بہنوں کو گالیاں دے کر اپنی قبریں بھرنے سے گریز فرمائیں۔ شکریہ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >