شہری کے ہاتھ ، ناک اور کان کاٹنے کی ویڈیو بنانے والا لادی گینگ کا اہم رکن گرفتار

ڈیرہ غازی خان میں لادی گینگ کے خلاف پولیس کی بڑی کارروائی میں شہری کے ہاتھ، ناک اور کان کاٹنے کے بہیمانہ واقعے کی ویڈیو بنانے والا ملزم گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازی خان میں بارڈر ملٹری پولیس نے سفاکانہ واردات کی ویڈیو بنانے والے مبینہ ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لادی گینگ کے گرفتار ملزم کا نام دہشت گردی ، قتل ، اقدام قتل اور اغوا کے مقدمات میں بھی شامل ہے۔

کمانڈنٹ بارڈر ملٹری پولیس حمزہ سالک نے دعوی کیا ہے کہ لادی گینگ کے خلاف جاری آپریشن میں قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سیمنٹ فیکٹری کے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے لادی گینگ کے ایک اہم رکن اسماعیل جیانی کو گرفتار کیا۔

حمزہ سالک کے مطابق ملزم اسماعیل جیانی نے گینگ ممبر کے ہاتھ ، ناک اور کان کاٹنے کے بہیمانہ واقعے کی ویڈیو بنائی تھی۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے پنجاب پولیس نے کہا تھا کہ اس نے ڈی جی خان میں لادی گینگ کے خلاف انٹیلی جنس پر مبنی آپریشن شروع کرنے کا فیصلہ کیا۔

پولیس کے مطابق اس حوالے سے ایف آئی اے کو لادی گینگ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کرنے کی سفارشات ارسال کردی گئیں ہیں۔

سرچ آپریشن میں 200 کے قریب گاڑیاں اور 700 سے زائد اہلکار حصہ لے رہے ہیں۔ آپریشن کے دوران گینگ کی تلاش اور شناخت کے لئے بائیو میٹرک مشینیں استعمال کی جارہی ہیں۔

آپریشن میں سخی سرور سے تعلق رکھنے والے لادی گینگ کا ایک سہولت کار بھی گرفتار کیا گیا ہے جو لادی گینگ کے موبائل نمبروں پر بیلنس کرواتا تھا۔

قبائلی علاقے تمن کھوسہ میں لادی گینگ کی تلاش میں بارڈر ملٹری پولیس ، پنجاب پولیس اور رینجرز موجود ہیں۔ نامعلوم مقام پر لادی گینگ کے ممبروں کی تلاش جاری ہے جبکہ گینگ کے متعدد ٹھکانوں کو بھی آگ لگا دی گئی ہے۔

پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق ، ڈیرہ غازی خان کے قبائلی علاقے تمان کھوسہ میں تین افراد کو لادی گینگ نے اغوا کیا تھا۔اغوا کے بعد ، خیر محمد نامی ایک مغوی کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا تھا اور محمد رمضان کو تیز دھار آلے سے ہلاک کردیا گیا تھا۔

آپریشن شروع ہونے کے بعد ڈاکوؤں نے تیسرا یرغمالی رہا کر دیا جس کے بعد وہ گھر واپس آیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >