خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتار

خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتار

قومی احتساب بیورو (نیب) کی ایک ٹیم نے پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں عدالت سے گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق فرخ شاہ نے آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں سپریم کورٹ میں قبل از وقت گرفتاری کے لئے درخواست دی تھی۔ درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے حکم دیا تھا کہ فرخ شاہ کو سکھر احتساب عدالت میں 3 دن میں گرفتار کر کے پیش کیا جائے۔

سپریم کورٹ کے حکم کے بعد فرخ شاہ تھرڈ ایڈیشنل اینڈ سیشن جج سکھر کی عدالت میں اپنی گرفتاری کے لئے پیش ہوئے۔

اس موقع پر فرخ شاہ کے وکیل نے مؤقف اختیار کیا کہ میرے مؤکل نے تحقیقات میں نیب کے ساتھ مکمل تعاون کیا۔ نیب نے سپریم کورٹ میں اعتراف کیا کہ تحقیقات مکمل ہوچکی ہیں۔ جب تفتیش مکمل ہوجائے تو گرفتاری کی کیا ضرورت ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ سپریم کورٹ نے ملزم کو نیب کے سامنے گرفتاری دینے کا حکم دیا تھا لیکن فرخ شاہ نے نیب کی تفتیشی ٹیم کے بجائے عدالت میں پیش ہو کر گرفتاری دی۔ نیب ٹیم نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ ملزم شروع سے تفتیشی ٹیم کے ساتھ تعاون نہیں کررہا تھا۔

سیشن کورٹ نے فرخ شاہ کی گرفتاری کا حکم دیا ، جس پر نیب کی ٹیم نے فرخ شاہ کو عدالت سے گرفتار کرلیا۔نیب نے عدالت سے ملزم کے 15 دن کے ریمانڈ کی بھی درخواست کی۔

دوسری جانب نیب نے گرفتاری کے بعد فرخ شاہ ولد خورشید شاہ کو نیب آفس منتقل کردیا۔ اس حوالے سے نیب نے کہا کہ فرخ شاہ کو جلد احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا اور ریمانڈ طلب کیا جائے گا۔ یاد رہے کہ سید فرخ احمد شاہ پی ایس 24 سکھر ۔3 سے پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر رکن سندھ اسمبلی منتخب ہوئے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >