ملتان: دلہن سے زیادتی کا ایک اور ملزم مشکوک مقابلے میں مارا گیا

ملتان کے علاقے شجاع آباد میں دلہن سے اجتماعی زیادتی کیس کا زیرِ حراست ایک اورملزم مبینہ مقابلے میں مارا گیا جبکہ پولیس کا دعویٰ ہے کہ ملزم شوکت رونگھ اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہوا۔

پولیس کے مطابق ملزم شوکت کو کچھ روز قبل گرفتار کیا گیا تھا، جب اسے برآمدگی کے لیے لے جایا جا رہا تھا کہ اس کے ساتھیوں نے اسے چھڑانے کے لیے پولیس پر فائرنگ کی اور ملزم شوکت گولی لگنے سے ہلاک ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم شوکت کے ساتھی اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہو گئے۔

اس سے 2 روز قبل بھی دلہن سے زیادتی کے کیس میںایک ملزم عابدی بھی ایک مقابلے میں مارا گیا تھا ۔ہلاک ملزم قتل، ڈکیتی، رابری، دوران ڈکیتی ریپ، اغوائ، چوری، موٹر سائیکل سمیت 40 سے زائد مقدمات میں ملوث تھا اور علاقے میں خوف کی علامت سمجھا جاتا تھا۔

ہلاک ملزم 2 ہفتے قبل تھانہ سٹی شجاع کے علاقے حاجی شاہ والا میں دلہن زیادتی کیس میں بھی پولیس کو مطلوب تھا ملزم سال 2020 میں تھانہ مظفر آباد کے علاقے میں ڈکیتی کے دوران ریپ کے مقدمہ میں پولیس کو مطلوب تھا۔

واضح رہے کہ ملتان کے علاقے شجاع آباد میں 12 روز قبل 4 ملزمان نے گھرمیں ڈکیتی کے دوران دلہن کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ڈاکو دوران ڈکیٹی دلہا پر بھی تشدد کرتے رہے۔

ڈاکوؤں نے 2 گھنٹے تک اہل خانہ کو یرغمال بناکررکھا ، ڈاکو 5 تولے سونا اور سوا لاکھ نقدی لوٹ کرفرار ہوگئے جس کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب نے نوٹس لیا۔

  • ان حرام زادوں کو ایسے ہی پولیس مقابلوں میں مارنا ہی بہتر ہے ورنہ تو گوبر قاسم کی حرامی نسل پیسے کھاکر ان کو طھوڑ دیتے ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >