بیوی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے والا شخص ویڈیو وائرل ہونے پر گرفتار

بیوی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے والا شخص ویڈیو وائرل ہونے پر گرفتار

گوجرانوالہ میں بیوی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنائے جانے کا واقعہ پیش آیا ہے جس میں پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گوجرانوالہ تھانہ کینٹ کی حدود میں ایک افسوس ناک واقعہ پیش آیا جہاں تین بچوں کے والد نے بیوی کو بدترین تشدد کا نشانہ بنایا جس کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھی۔

متاثرہ خاتون ماہم کے والد احمد صادق کی مدعیت میں درج کیے گئے مقدمے کے مطابق ماہم کی شادی 8 برس قبل عثمان ارشد سے ہوئی تھی دونوں کے 3 بچے بھی ہیں، تاہم عثمان اکثر و بیشتر اپنی بیوی کو بدترین تشدد کا نشانہ بناتا کبھی اس کا گلا دباتا تو کبھی اس کی کمر پر مارتا اور کبھی اس کے پیٹ میں ٹانگیں مارتا۔

بیوی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے والا شخص ویڈیو وائرل ہونے پر گرفتار

ایف آئی آر کے مطابق اس بدترین تشدد کے نتیجے میں ماہم اکثر بے ہوش ہوجایا کرتی تھی، تاہم 10 اور 11 جون کی درمیانی شب میں عثمان نے ماہم کو اس قدر تشدد کا نشانہ بنایا کہ اس کی حالت غیر ہوگئی اور اسے ہسپتال منتقل کرنا پڑا۔

ماہم کے والد نے مطابق سرکاری اسپتال میں ماہم کا میڈیکل چیک اپ کروایا گیا جس کی رپورٹ درخواست کے ساتھ جمع کروادی گئی ہے۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم عثمان کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔

گوجرانوالہ کے سی پی او کے ٹویٹر ہینڈل پر جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق واقعے پر سی پی او نے نوٹس لے لیا ہے، ملزم کو گرفتار کرکے مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے، عوام کے جان ومال کی حفاظت ہماری اولین ذمہ داری ہے۔

  • اس گینڈے کا پنڈا دیکھو بیوی بے چار تو اس کی چالیس روٹیاں روز پکاتی ہوگی حرامخور طاہر اشرفی کی طرح سوور مافق پھٹا ہوا ہے
    اس کے باپ کو بھی چھتر لگاو کیونکہ جب اس گینڈے نے پہلی بار بیوی کو مارا تھا تو اس وقت کیوں پولیس کو خبر نہ کی اور کمپرومائیز کرواتا رہا؟

  • Feeling sad for the kids. No human being deserved such treatment. He is a psychopath and should be locked in a mental asylum until he is fit for the interaction. This is what modern societies do.

  • قوم ذہنی مریض بن چکی ہے.

    .اس قسم کی ذہنی کیفیت ساری دنیا میں بیماری سمجھی جاتی ہے اور اس کا علاج کیا جاتا ہے.

    اس کے ساتھ ساتھ .تعلم اور تربیت کی بھی ضرورت ہے.

  • افسوس اس بات کا ہے کہ لیدخور اس واقعے کو بھی سیاسی بنا رہے ہیں یہ کسی بھی پارٹی کا ہو اس کو پھانسی پر لٹکا دو


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >