سندھ پولیس ان ایکشن،بحریہ ٹاؤن کراچی کے باہر مظاہرہ کرنے والے متعدد افراد گرفتار

سندھ پولیس نے بحریہ ٹاؤن کراچی میں گزشتہ ہفتے ہونےوالے مظاہروں  کی کال دینے والی سندھ کی قوم پرست جماعتوں کے کارکنان کو گرفتار کرلیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق  سندھ ایکشن کمیٹی میں شامل قوم پرست جماعتوں کے عہدیداران نے دعویٰ کیا ہے کہ سندھ حکومت بحریہ ٹاؤن انتظامیہ کے ساتھ اپنی محبت کا ثبوت دیتے ہوئے ہمارے کارکنا ن کو گرفتار کررہی ہے۔

اس حوالے سے  ترجمان سندھ یونائیٹڈ پارٹیز  امیر آزاد  نے خبررساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سندھ کے مختلف علاقوں سے  ہمارے کارکنان کو گرفتار کیا جارہا ہے ، جو تعداد ہمیں اب تک موصول ہوئی وہ 60 ہے، تاہم گرفتار ہونےو الے کارکنان اس سے بھی زیادہ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ پولیس نے ان کارکنان کی گرفتاری کی وجوہات بھی نہیں بتائی ہیں، تاہم انہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس نے ان کارکنان کو  بحریہ ٹاؤن کراچی کے باہر ہونے والے مظاہروں کی وجہ سے گرفتار کیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے بحریہ ٹاؤن کراچی میں   مبینہ طور پر گوٹھوں کی زمین پر قبضے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، اس موقع پر مشتعل مظاہرین نے توڑپھوڑ کی اور بحریہ ٹاؤن کے مزکزی دروازے کو آگ لگادی۔

واقعے میں متعدد دوکانوں ،گاڑیوں اور دیگر املاک کو نقصان پہنچاتھا، پولیس نے مقامی افراد ، سندھ ایکشن کمیٹی کے عہدیداران اور دیگر نامزد افراد کے خلاف دہشت گردی، قومی پرچم کی توہین اور دیگر دفعات کے  تحت مقدمات درج کرکے گرفتاریاں تیز کردی تھیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>