قومی اسمبلی اجلاس: ہنگامہ آرائی کے دوران تحریک انصاف کے اراکین زخمی

قومی اسمبلی میں بجٹ سیشن کے دوران ہونے والی ہنگامہ آرائی کے دوران تحریک انصاف کی رکن ملیکہ بخاری اور ایم این اے فہیم خان زخمی ہوگئے ہیں۔

قومی اسمبلی اجلاس آج پھر سے ہنگامہ آرائی کی نظر ہوگیا، ہنگامہ آرائی کے دوران حکومت اور اپوزیشن کے اراکین ایک دوسرے پر چڑھ دوڑے اس دوران تحریک  انصاف کی رکن ملیکہ بخاری کی آنکھ پر چوٹ لگ گئی۔

ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری نے ملیکہ بخاری کے زخمی ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب پھینکی جانے والی بجٹ کتابوں میں سےایک ملیکہ بخاری کو لگی جس سے ان کی آنکھ پر چوٹ لگی۔

قاسم سوری مزید کہا کہ ایوان میں حکومت کی خواتین اراکین اسمبلی پر حملے ہوئے، اگر ایوان کا کا ماحول خراب ہوا تو ہم سب اس کے ذمہ دار ہوں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن بینچز پر ایسے لوگ ہیں جو ایوان کا ماحول اچھا دیکھنا نہیں چاہتے، اپوزیشن میں متعدد اراکین قائد حزب اختلاف  شہباز شریف کے ہی خلاف ہیں ، ایوان کا ماحول خراب کرنے والے اراکین کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

ہنگامہ آرائی کے دوران تحریک انصاف کے ایک اور رکن فہیم خان بھی زخمی ہوئے، فہیم خان نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ ہنگامہ آرائی کے دوران مجھ سمیت ہمارے بہت سے اراکین زخمی ہوئے، ہم عزت کیلئے سیاست کرتے ہیں  ن لیگی اراکین سے جب کچھ ہوا نہیں تو یہ گالیوں پر اتر آئے۔

انہوں نے کہا کہ ایوان میں ان کی مائیں بہنیں بھی ہیں ہماری خواتین بھی ہیں مگر ان کو شرم نہیں آئی اور یہ گالیاں دیتےرہے،  بدقسمتی سے ن لیگ کے چیف وہیپ  بھی گالیاں دے رہے تھے،ہم عمران خان کی قیادت میں اس گندی  سیاست کا خاتمہ کریں گے۔

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ ہم لوگ نعرے بازی کررہے تھے کہ اس دوران ن لیگی رکن شیخ روحیل اصغر اور ایک دوسرے رکن نے گالم گلوچ شروع کردی، ہم بھی جذباتی ہوگئے، ہمارے نعروں کے جواب میں اپوزیشن اراکین گالیاں دے رہے تھے اسی اثناء میں لڑائی شروع ہوگئی اپوزیشن کی جانب سے پھینکی گئی بجٹ دستاویزات  میں سے ایک ملیکہ بخاری کو لگی۔

تحریک انصاف کی رہنما  زرتاج گل وزیر نے ملیکہ بخاری کےسا تھ بیٹھ کر کہا کہ ہماری تربیت عمران خان نے کی ہے اور ہمیں اپوزیشن کے تمام وار سہنا سکھایا ہے، مگر اپوزیشن اراکین گالم گلوچ کرتے ہیں ، یہ جو زبان استعمال کررہے ہیں وہ کوئی چلا نہیں سکتا، مائیں بہنیں وہ گفتگو سن نہیں سکتیں۔

زرتاج گل نے کہا کہ ان کو اسمبلیوں میں پہنچانے والے  ووٹرز کو پوچھنا چاہیے کہ  ان کے نمائندے اسمبلیوں میں جاکر کس قسم کی زبان استعمال کرتے ہیں۔

  • سارا قصور خان کا ہے. نون لیگ والے تین سال سے حکومت کو مار رہے ہیں مگر مجال ہو جو کسی ایک بھی لیگی کنجر کو پھینٹی لگی ہے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >