استاد کے جرم پر کوئی سوال نہیں کرتا، مولوی کرے تو سب اسلام پر تنقید شروع کردیتے ہیں۔ خلیل الرحمان قمر

مشہور مصنف و ڈرامہ نگار خلیل الرحمان قمر نے کہا ہے کہ جب کوئی استاد جرم کرے تو کوئی اس کے پیشے سے متعلق سوال نہیں کرتا مگر وہی جرم اگر کوئی مولوی کرے تو سب اسلام پر تنقید شروع کردیتے ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اکثر اپنی گفتگو کی وجہ سے تنازعات کا شکار رہنے والے مشہور ڈرامہ نگار خلیل الرحمان قمر نے ایک مفتی کی جانب سے طالب علم کے ساتھ بدفعالی کے معاملے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارے معاشرے میں جب ایک یونیورسٹی کا پروفیسر کسی کو جنسی طور پرہراساں کرنے میں ملوث پایا جاتا ہے تو میڈیا اس کے ادارے اور اس کے پیشے کو چھپانا شروع کردیتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لیکن جب ایک مدرسے کا مولوی اسی جرم میں ملوث پایا گیا اچانک پورے میڈیا نے مل کر اسلام پر تنقید شروع کردی، کیا ایسا نہیں ہونا چاہیے تھا کہ دونوں کو یکساں طریقے سے جج کیا جاتا؟

خلیل الرحمان قمر نے کہا کہ یہ ہمارے میڈیا اور ان کے ریگولیٹر اداروں کے دہرے معیار ہیں، جرم کا کوئی مذہب نہیں ہوتا اس لیے جرم کو کسی مذہب سے نہیں جوڑا جانا چاہیے، جرم ایک شخص کا ذاتی عمل ہے اور اسی شخص کو انفرادی طور پر اس کی سزا ملنی چاہیے اس کے مذہب کو نہیں۔

انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ ہم نے یہ بھی دیکھا کہ مولوی کی بدفعالی کی ویڈیو آگ کی طرح سوشل میڈیا پر پھیل گئی مگر اس کے برعکس یونیورسٹی پروفیسر کے معاملے کو خفیہ رکھا گیا، ان کی اصل شناخت اور ان کے شعبہ جات تک کو مخفی رکھا گیا اور عوام کے سامنے نہیں لایا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں لاہور کے ایک مدرسے کے استاد مفتی عبدالعزیز کی ایک بچے سے بدفعالی کی ویڈیو منظر عام پر آئی تھی جس کے بعد اس مولوی پر مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

  • I have also noticed that media don’t highlight the sexual harassment incidents occurred in Schools and Universities. Media should play equal and fair role in this regard and secondly Rapists should be hanged publicly in the broad day light.

  • نواز زرداری کوئی بھی معاملہ اسلام اور پاکستان پر ہی ڈالیں گے ہیں
    نواز نے تو ظلم کی انتہا اس دن کر دی تھی جس دن اس نے
    انارکی پھلانے کے لیے ختم نبوت تک کو نہیں بخشا
    استغفراللہ پتا نہیں ان کا انجام کیسا ہو گا

  • Yaar ye mufti apne apko rehmatullah mudda zillah molana aur janay kya kya kehlwatae hain .loge inke peeche namaaz perhte hen apne bachon ko quraan ki taleem ke liye in ke paas bhejte hen .chand nazar anay se le ker talaq tak k mamlon mein inki raaye lete hen. inke madrasson mein chande dete hen.

    lekin ye baat such hai ke in ke harkaton ki wajah se islam ko ragra nahin lagna chahye.

    aur islamic values uphold kerna her musalman ka kaam hai sirf in molanaon aur muftion ka nahin

  • قمر صاحب استاد یا پروفیسر اپنے مزہب کو ایکسپلائٹ کرکے نہیں کماتے نہ ہی کافر اور مسملان اور یہودی ایجنٹ ہونے کی سرٹیفیکیٹ بانٹتے ہیں اور نہ ہی سارے شاگرد پروفیسر یا استاد کے رحم کرم پر ہوتے لیکن فضلو خنزیری نطفہ حرام اور مودی کے پالتو کتے نے فتوئے جاری کرنے کی لوگوں کو یہودی ایجنٹ اور کافر کہنے کی فیکٹریاں لگائی ہوئی ہیں لیکن اس کے باوجود اس خنزیری نسل کے ناپاک جانور مفتی کو لوگ برا بھلا کہہ رہے ہیں اسلام کو نہیں
    مگر آپ جیسا رائٹ اپروچ والا بندہ اچھی طرح جانتا ہے کہ مفتی اسلام کا سمبل ہوتا ہے اور لوگ مفتی سے کسی بھی اسلامی ابہام پر مشورہ یا فتوئے لیتے ہیں
    اور یہ حرامی مفتی تو جو بدکاری کت رہا تھا میرے جیسا اور کوئی گناہ کرے تو گناہ تو اتنا ہی ہے اور میں بھی اتنا ہی گناہ گار لیکن لوگ یہی کہیں گے ڈاکٹر رانا بڑا ذلیل ہے لیکن اگر میں مفتی ہوکر ایسا کروں تو لوگ لازمی میرا مزہب بھی ڈسکس کریں گے اور کہیں کہ کہ مسلمانوں کے مولوی اور مفتی ایسے حرامی ہیں تو یہ کیسا مزہب ہے مفتی مزہب کا کسٹوڈین ہی ہوتا ہے تو اسلامُ کا کسٹوڈین بھی ایسا ہو تو اسلام کیسا ہوگا۔ جبکہ کوئی پروفیسر کوئی ڈاکٹر کوئی وکیل ایسا کرے تو لوگ اس کے جرم کا تعلق مزہب سے نہیں جوڑتے ہاں کوئی سیاسی اور لا میکر حرامی پن کرے تو لوگ اس کس جمہوریت سے نتھی کرتے ہیں صرف اس لا میکر کو گالیاں نہیں دیتے جمہوریت کو بھی گالیاں دیتے ہیں جج غلط فیصلے کرے نا انصافی کرے تو نظام عدل کو گالیاں پڑتی ہیں
    تو آپ کا پوائنٹ غلط اور
    absurd
    ہے پلیز اپنی اصلاح کریں اور رانگ نمبر نہ ڈائل کریں

  • مولوی آمر بلمعروف نہی عن البکر کرے تو جواب ملتا ہے، تو اسلام کا ٹھیکیدار ہے! مولوی گناہ کر بیٹھے تو اعتراض مولوی تو اسلام کا علمبردار ہے اس سے گناہ کیوں ہو گیا!؛

  • Khalil sahib har banda apny profession sy pehchana Jata aur religion aisi Cheez hai jsy dunia mai pak samjha Jata aur isy present Krny waly log b aisy hoty hai aur sari umar mazhabi ko present Krny waly log hi last mai iske ult nikly to Baat to nikly gi phir….aik aur simple si Cheez hai j’s industry sy ap belong krty hai sb ko pata waha actress ko director actor financers har koi harap Jata lakin phir khud ko pious sabit krty hai lakin log director ko nahi industry ko hi gandi smjhty hai

  • بحثیت ایک استاد کے وہ چاہے دینی تعلیم کا ہو یا دنیاوی تعلیم کا اس طرح کے جرم عام آدمی سے ان پر زیادہ سنگین سزا کا قانون ہونا چاہیے اسی طرح جس طرح اسلامی حدود قانون میں شادی شدہ اور غیر شادی شدہ میں زنا کی سزا میں فرق ہے اگر انصاف ملنا شروع ہو جائے تو پھر جرم بھی کم ہو جائیں گے مگر کب اس جواب کسی کے پاس نہیں نہ محترم خلیل الرحمٰن نے قمر صاحب کے پاس نہ کسی اور صاحب قلم طاقت کے پاس کہیں نہ کہیں ہمیں اپنی واہ واہ چاہیے چاہے معاملات معاشرتی طور پر بگاڑ ہی پیدا کریں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >