پرینک کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والے ملزم کے 2 ساتھی گرفتار

پرینک کے نام پر ہراساں کئے جانے کے واقعات میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے، گوجرانوالہ میں پولیس نے بغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیو بنا کر پرینک کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والے ملزم کے دو ساتھیوں کو گرفتار کرلیا۔

پولیس نے بتایا ہے کہ گرفتار ملزمان مرکزی ملزم خان علی کے ساتھ کام کرتے تھے، امیر حمزہ بطور کیمرہ مین جبکہ ظفر مصطفیٰ بطور ایڈیٹر کام کررہےتھے۔

پولیس کے مطابق مزید تحقیقات کے لئے تینوں ملزمان کا عدالت سے تین روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کرلیا گیا ہے۔

گوجرانوالہ کےنوشہرہ روڈ کے رہائشی حسن بٹ نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کروایاتھا جس پر پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم خان علی کو گرفتار کرلیا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل پرینک کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والے مرکزی ملزم کو گرفتار کیا گیا تھا۔ ملزم پرینک ویڈیو کے نام پر مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >