خاتون اول کی خصوصی دلچسپی،جی سی یونیورسٹی میں ترقیاتی منصوبوں کے آغاز کا فیصلہ

خاتون اول کی خصوصی دلچسپی،جی سی یونیورسٹی میں ترقیاتی منصوبوں کے آغاز کا فیصلہ

خاتون اول بشریٰ عمران کی تعلیم کے شعبہ میں خصوصی دلچسپی، جی سی یونیورسٹی کیلئے خزانے کا منہ کھول دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ کالج یونیورسٹی میں 1 ارب 84 کروڑ روپے سے چار ترقیاتی منصوبوں کے آغاز کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پنجاب حکومت جی سی یو میں گرلز ہاسٹل، سوئمنگ پول اور صوفی ازم سنٹر کے قیام کے لئے فنڈز فراہم کرے گی۔ تینوں منصوبے بجٹ دستاویز میں پنجاب کے سالانہ ترقیاتی پروگرام کا حصہ ہیں۔

دوسری جانب وفاقی حکومت بھی جی سی یونیورسٹی کے نئے کیمپس کے فیز- ٹو کے لئے 1158 ملین دے گی۔ مالی سال 2021-22 میں ان منصوبوں کے آغاز کے لئے بجٹ دستاویزات میں 410 ملین روپے مختص کئے گئے ہیں، 410 میں سے 143ملین روپے سے جی سی یو میں شیخ ابوالحسن اشھدلی تصوف، سائنس اینڈٹیکنالوجی سینٹر قائم کیا جائے گا۔

منصوبہ کے مطابق سوئمنگ پول پر 100 ملین جبکہ گرلز ہاسٹل پر 440 ملین روپے کی لاگت آئے گی۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اصغر زیدی کا کہنا تھا کہ جی سی یو پاکستان کی سب سے قدیم اور معتبر درسگاہ ہے، سابقہ حکومتوں کی جانب سے جی سی یو کو نظرانداز کیا جاتا رہا ہے۔ جی سی یو میں صوفی سنٹر پاکستان کی خاتون اول محترمہ بشری عمران کا اہم اقدام ہے۔

ان کا مزید کہناتھا کہ پاکستان بھر سے طالبات اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے لئے جی سی یو آتی ہیں لیکن بدقسمتی سے 200 کی گنجائش والا صرف ایک ہوسٹل موجود ہے۔اب سائنس بلاک میں تین سو سے زائد طلباء کی گنجائش والاچار منزلہ ہاسٹل تعمیر کیا جائے گا۔

  • Stop these Sufi Centers inside Government Universities. Sufi-ism has nothing to do with Science and Technoloy. Keep Bushra Bibi out of government matters. If she wants to open Sufi centers, she should do it from her own money, not from public funds. Maneka family of Pakpattan has lot of money of their own.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >