پسند کی شادی کا بدلا،لڑکی والوں نے لڑکے کی والدہ کو مبینہ زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

پسند کی شادی کا بدلا،لڑکی والوں نے لڑکے کی والدہ کو مبینہ زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

یوں تو آئے روز غیرت کے نام پر قتل کے بہت سے واقعات سننے اور دیکھنے کو ملتے ہیں لیکن مظفرگڑھ میں ایسا واقعہ پیش آیا ہے کہ روح تک کانپ اٹھے۔ علی پور کے علاقے فتح پور جنوبی میں بااثر افراد نے پسند کی شادی کا بدلہ لینے کےلئے لڑکے کی والدہ کو بہیمانہ تشدد اور زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

تفصیلات کے مطابق مظفرگڑھ کی تحصیل تھانہ صدر علی پور کی حدود فتح پور جنوبی میں بااثر افراد نے پسند کی شادی کرنے پر لڑکے کی 50 سالہ والدہ زرینہ کو اغواء کرکے زیادتی کی کوشش کی اور بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔

ملزمان نے خاتون کو نیم برہنہ کیا اور اسی حالت میں خاتون کے جسم پر سلگتی ہوئی سگریٹ لگاتے رہے جبکہ زمین پر بھی گھسیٹا۔

پولیس کے مطابق کچھ عرصہ قبل ہی متاثرہ خاتون زرینہ بی بی کے بیٹے ناصر نے پسند کی شادی کی تھی جس کا بدلہ لینے کے لئے لڑکی والوں نے ناصر کی ماں زرینہ اور والد ﷲ بخش کو اغواء کرلیا۔ ملزمان اغواء کر کےخاتون اور اس کے شوہر کو نامعلوم جگہ پر لے گئے جہاں انہوں نےخاتون کے ساتھ زیادتی کی۔

پولیس نے کارروائی کے دوران زرینہ کے شوہر ﷲ بخش کو ملزمان کی قید سے آزاد کرالیا ہے اور 3 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ پولیس نے متاثرہ خاتون کو تحصیل ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کردیا ہے۔

  • Now everyone will be blaming the Girl’s family. The reality is in Pakistan men are blackmailed in the name of "Gharat” . Im 99% sure those reading and in comments section other than the madar pidar elite class would have also done the same.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >