لاہور دھماکے میں استعمال ہونیوالی گاڑی سے متعلق اہم انکشافات، مالک گرفتار

لاہوردھماکا: ممکنہ استعمال ہونے والی گاڑی کی تصویر سامنے آ گئی۔۔ گاڑی کے مالک کا بھی پتہ چلا لیا گیا۔

لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن دھماکے میں استعمال ہونے والی گاڑی کو حملے سے قبل پولیس کی جانب سے چیک کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے، گاڑی ڈیوڈ پیٹرپال کے زیر استعمال تھی جنہیں گرفتار کرلیا گیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق حملے میں استعمال ہونے والی گاڑی براستہ موٹر وے لاہور میں بابو صابو انٹرچینج سے داخل ہوئی جہاں 9 بج کر40 منٹ کر سیکیورٹی اہلکاروں نے گاڑی روک کر دستاویزات چیک کیں اور گاڑی کو شہر میں داخل ہونے کی اجازت دیدی۔

کاؤنٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ نے ناکے پر تعینات اہلکاروں کو تفتیش میں شامل کرلیا ہے کہ کیسے یہ اہلکاروں کو گاڑی میں موجود دھماکہ خیز مواد کا سراغ لگانے میں ناکام رہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گاڑی کراچی کے رہائشی ڈیوڈ پیٹر پال نامی شخص کے زیر استعمال رہی جسے لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر جہاز کے اندر سے گرفتار کرکے تفتیش کیلئے نامعلوم مقام پر متنقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ دھماکے میں استعمال ہونےوالی گاڑی 11 سال قبل گوجرانوالہ سے چھینی گئی جس کا مقدمہ گاڑی کے مالک شکیل کی مدعیت میں گوجرانوالہ کے تھانہ کینٹ میں درج کیا گیا تھا، ایف آئی آر کے مطابق نومبر2010 میں اس کے ڈرائیور منظور سے 3 ڈاکوؤں نے گاڑی چھین لی تھی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>