صوبہ سندھ نے مہنگائی میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا، ادارہ شماریات کی رپورٹ جاری

صوبہ سندھ نے مہنگائی میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا، ادارہ شماریات کی رپورٹ

ادارہ شماریات کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق مہنگائی کے اعتبار سے صوبہ سندھ نے دیگر صوبوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے جہاں دیگر شہروں کی نسبت شہر قائد میں مہنگائی کی شرح سب سے زیادہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق 24 جون کو ختم ہونے والے ہفتے میں کراچی میں تقریباً 91 فیصد زیادہ قیمتیں وصول کی گئیں اور اسی طرح اشیائے ضروریہ سرکاری نرخ کے مقابلے میں 39 فیصد تک مہنگی فروخت کی گئیں۔

رپورٹ کے مطابق کراچی میں 20 کلو آٹے کی قیمت سرکاری نرخوں کے مقابلے 343 روپے، دودھ 65 روپے، چینی 25 روپے، بڑا گوشت 291 روپے، ٹوٹا چاول 50 روپےاور آلو 4 روپے مہنگے فروخت کیے گئے۔

سندھ کے بعد سب سے زیادہ مہنگائی پنجاب میں ریکارڈ کی گئی جہاں قیمتوں میں 38 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔ پنجاب کے بھی شہر فیصل آباد میں سب سے زیادہ مہنگائی ریکارڈ کی گئی جہاں سرکاری نرخوں کے مقابلے اشیائے ضروریہ کی 52 فیصد زائد قیمتیں وصول کی گئیں۔

صوبہ سندھ نے مہنگائی میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا، ادارہ شماریات کی رپورٹ

صوبہ سندھ نے مہنگائی میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا، ادارہ شماریات کی رپورٹ

اس رپورٹ میں 10 سے 12 بنیادی اشیائے خورونوش شامل ہیں جن کی قیمتوں کے فرق سے رپورٹ مرتب کی گئی ہے۔ اس کی ترتیب کے لیے مقرر کردہ ڈی سی ریٹ اور عام مارکیٹ کے نرخوں کا موازنہ کر کے رپورٹ ترتیب دی جاتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق سندھ اور پنجاب کے بعد تیسرا نمبر دارالحکومت اسلام آباد کا ہے جہاں مہنگائی 37 فیصد ریکارڈ کی گئی، خیبرپختونخوا میں 30 فیصد اور بلوچستان میں 22 فیصد مہنگائی دیکھی گئی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>