فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور سیلزٹیکس میں کمی، گاڑیاں 2 لاکھ24 ہزار روپے تک سستی ہوگئیں

وفاقی حکومت کی جانب سے نئے مالی سال کے بجٹ میں فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس میں کمی کے ثمرات نظر آنا شروع ہوگئے، 1 ہزار سی سی تک کی گاڑیوں کی قیمت میں 48 ہزار سے لے کر 2 لاکھ24 ہزار تک کی کمی واقع ہوگی۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت نے نئے بجٹ میں 660 سے 1ہزار سی سی کی گاڑیوں کیلئے پہلے سے عائد ڈھائی فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ختم کردی ہے جبکہ سیلز ٹیکس کی شرح کو 17 فیصد سے کم کرکے ساڑھے 12 فیصد تک محدود کردیا ہے۔

وفاقی حکومت نے نئے مالی سال کے بجٹ میں 1ہزار سے 2000 سی سی تک کی گاڑیوں پر سیلز ٹیکس تو 17 فیصد پر برقرار رکھا ہے تاہم فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی شرح 5 فیصد سے کم کرکے ڈھائی فیصد کردی ہے، جبکہ2 ہزار سے 3 ہزار سی سی کی گاڑیوں پر عائد ود ہولڈنگ ٹیکس کو ساڑھے 7 فیصد سے کم کرکےڈھائی فیصد کردیا گیا ہے۔

660 سے 1ہزار سی سی کی گاڑیوں کیلئے وفاقی حکومت کی جانب سے اس فیصلے کے بعد آٹو مینوفیکچرنگ کمپنیوں کی جانب سے گاڑیوں کی نئی قیمتوں کی تفصیلات جلد سامنے آئیں گی، تاہم آٹو انڈسٹری کے ماہرین کے مطابق ٹیکس میں کمی سے 660 سے 1 ہزار سی سی کی گاڑیوں میں 88 ہزار سے ایک لاکھ21 ہزار جبکہ 1ہزار سی سی سے 2000سی سی تک کی گاڑیوں کی قیمتوں میں 48 ہزار سےایک لاکھ 28 ہزار روپے تک کی کمی ہوسکتی ہے۔

ماہرین کے مطابق 2 ہزار سے 3ہزار سی سی کی گاڑیوں پر ود ہولڈنگ ٹیکس کی شرح میں کمی سے اس کیٹیگری کی گاڑیوں کی قیمت میں 1لاکھ 60 ہزار روپے سے 2 لاکھ 24 ہزار روپے تک کمی واقع ہوسکتی ہے.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >