عثمان مرزا کیس: متاثرہ لڑکے اور لڑکی کی مدد کیلئے جماعت اسلامی سے درخواست

اسلام آباد میں تشدد کا نشانہ بننے والے لڑکے اور لڑکی کی جانب سے مدد کیلئے جماعت اسلامی سے رابطہ کیا گیا ہے، جماعت اسلامی کا ایس ایس پی آپریشنز عطا الرحمان اور اے ایس پی آمنہ بیگ سے رابطہ۔
ایس ایس پی آپریشنز عطا الرحمان کی جانب سے متاثرہ لڑکے لڑکی کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کے دوران کہا گیا کہ اس واقعے کے پیچھے جو بھی حیوانی ذہنیت رکھنے والے لوگ ہیں وہ اس وقت سلاخوں کے پیچھے ہیں۔

ایس ایس پی آپریشنز کا کہنا تھا کہ جس لڑکے اور لڑکی کو مارا گیا ان کی شادی بھی ہوچکی ہے، ملزمان کو گرفتار کرچکے ہیں میرٹ پر تفتیش کریں گے اور پوری کوشش کریں گے کہ کوئی ایسا پہلو نہ چھوڑیں جس میں ملزمان کو ریلیف ملے یا انہیں ضمانت بھی مل سکے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہم یہ کیس منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے لڑیں گے، متاثرہ خاندان کے ساتھ کھڑے ہیں اور انہیں یہی پیغام دے رہے ہیں کہ پورا معاشرہ اور ملک آپ کے ساتھ کھڑا ہے۔
اس موقع پر اسد کے والد کا کہنا تھا کہ میں جماعت اسلامی کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ہمارے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے کوششیں کیں، میں پولیس کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ہمارے ساتھ کھڑے رہنے کا عہد کیا۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں امید ہے کہ واقعے میں ملوث تمام افراد کو ضرور سزا ملے گی۔
واضح رہے کہ گزشتہ روز سوشل میڈیا پر اسلام آباد کے سیکٹر ای 11/2 کی ایک ویڈیو منظر عام پر آئی تھی جس میں ایک لڑکے اور لڑکی کو کچھ لوگ بری طرح تشدد کا نشانہ بنارہے تھے، ویڈیو وائرل ہونے پر آئی جی اسلام آباد نے فوری طور پر نوٹس لیا اور پولیس نے واقعے میں ملوث عثمان مرزا کو ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >