افغان سفیر کی بیٹی کےمبینہ اغوا پر بھارتی پروپیگنڈہ، پاکستان کا منہ توڑجواب

ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چودھری نے اپنے ایک بیان میں پاکستان میں افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا کے معاملے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ بھارت کا اس معاملے سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی اسے پاکستان کے اندرونی معاملے سے کوئی سروکار ہونا چاہیے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ افغان سفیر کی صاحبزادی کے معاملہ پر بھی بھارتی پروپیگنڈا مشینری کام کررہی تھی، اس پروپیگنڈا کا مقصد جھوٹا بیانیہ تیار کرنا تھا، بھارت نے حالیہ تاریخ میں ریاستی دہشت گردی، غیرقانونی قبضے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کو بےعزت کرنے جیسے گھٹیا ریکارڈ قائم کیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کی پاکستان کے خلاف غلیظ مہم کے بارے میں سب جانتے ہیں، یورپی یونین اور خودمختار بین الاقوامی اداروں کو اس کا اچھی طرح سے علم ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس واقعہ پر سفیر کی صاحبزادی کی جعلی تصاویر چلائی گئیں۔

پاکستان نے بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ منفی پروپیگنڈا سے باز رہے، بھارت افغانستان میں سپائلر کا کردار ادا کر رہا ہے۔ پاکستان کی کوشش ہے کہ اس کے اس کردار کو بھی دنیا کے سامنے لایا جائے۔

واضح رہے کہ افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا کی خبروں کے بعد بھارتی صحافیوں اور ویریفائڈاکاؤنٹس نے افغان سفیر کی بیٹی سے منسوب پاکستانی خواجہ سرا ٹک ٹاکر گل چاہت کی تشدد زدہ تصاویر شئیر کرتے ہوئے پروپیگنڈا کیا تھا کہ افغان سفیر کی بیٹی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔

پاکستان نے تحقیقات کیں تو یہ معاملہ سامنے آیا کہ افغان سفیر کی بیٹی اغوا نہیں ہوئی جبکہ افغان سفیر کی بیٹی کے بیانات میں تضادات پائے گئے۔

  • اس وزیر خارجہ کی شکل دیکھ کر وہی سوال ابھرتا ہے
    قاضی فائیز عیسی اور اسکی شکل سگے بھائیوں کی طرح ملتی ہے
    بس معلوم کرنا باقی ہے کہ اسکا باپ قاضیُ فائز عیسی کے گھر جاتا رہا یا فائز عیسی کا باپ اسکے گھر جاتا رہا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >