نورمقدم کو کیسے قتل کیا گیا؟ پوسٹمارٹم رپورٹ میں اہم انکشافات

اسلام آباد میں قتل ہونے والی نور مقدم کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مقتولہ کا سر دھڑ سے الگ کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق مقتولہ نور مقدم کی پوسٹ مارٹم رپورٹ پولیس کو موصول ہو گئی۔پوسٹمارٹم رپورٹ میں تصدیق کی گئی کہ مقتولہ کے جسم پر تشدد کے متعدد نشانات پائے گئے۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق مقتولہ کے گھٹنے کے نیچے کے حصے پر بھی زخموں کے متعدد نشانات ہیں۔ مقتولہ کی موت کی وجہ دماغ کو آکسیجن سپلائی کی بندش ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مقتولہ کا سر دھڑ سے الگ کیا گیا جبکہ مقتولہ کے جسم پر متعدد مقامات پر چاقو کے گہرے زخم ہیں۔

ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ مقتولہ کے معدے سے لیا گیا مواد فارنزک کیلئے لیبارٹری بھجوایا گیا ہے۔ پوسٹ مارٹم کیلئے مقتولہ کے معدے سے لیا گیا مواد فرانزک کیلئے لیبارٹری بھجوایا گیا ہے، جس کی رپورٹ تاحال پولیس کو موصول نہیں ہوئی

واضح رہے کہ اسلام آباد کے علاقے ایف 7 فور میں سابق پاکستانی سفارت کار کی بیٹی کے قتل کی خبریں بدھ 21 جولائی کو میڈیا میں منظر عام پر آئیں، جب کہ پولیس کا کہنا ہے کہ نور مقدم کا قتل 20 جولائی کو ہوا۔مقتولہ نورمقدم کو ظاہر جعفر نامی بزنس مین نے قتل کیا تھا جسے پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس تفتیش میں انکشاف ہوا کہ ملزم کا انگلینڈ میں بھی کریمنل ریکارڈ موجود ہے ، ملزم وہاں تین ماہ جیل کاٹ چکا ہے۔ملزم ماضی میں اپنی والدہ اور چھوٹے بھائی پر بھی تشدد کرچکا ہے۔

ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے کہا ہے کہ گرفتاری کے وقت ملزم نشے میں نہیں تھا جب ملزم کو گرفتار کیا وہ ہوش و حواس میں تھا

پولیس کے مطابق ملزم کے گھر سے آہنی کلپ، خون آلود چاقو ، پستول اور 100 سے زائد گولیاں برآمد کرلی گئیں۔ایک پستول برآمد ہوا جس میں گولی پھنسی ہوئی تھی، ملزم سے پسٹل برآمد ہوا ہے، تفتیش میں فائرنگ سامنے نہیں آئی، گولی پھسنے کی وجہ سے پسٹل نہیں چلا۔

پولیس کے مطابق مقتولہ کو پہلے ذبح کیا اور بعدازاں سر تن سے جدا کردیا۔ مقتولہ کچھ عرصے سے ملزم ظاہر کے ساتھ رہ رہی تھی۔

پولیس کے مطابق دورانِ تفتیش ملزم پولیس کو بھٹکانے کی کوششیں کررہا ہے، کیس سے ہٹ کر غیر ضروری باتیں کر رہا ہے۔ملزم بحالی سینٹر میں رہا یا نہیں ہمیں اس سے کوئی واسطہ نہیں۔

  • لڑکی صرف ستائیس سال کی ہے مگر دیکھنے میں چالیس کی لگتی ہے۔ یہ ہے نشہ کرنے کا نقصان، معلوم نہیں نشے میں کیا کچھ کرجاتے ہیں لوگ کیونکہ ان کے دماغ قابو میں نہیں ہوتے اور دلیر بھی ہوجاتے ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >