ہسپتال انتظامیہ کی غفلت،ایک خاتون مریض جاں بحق،متعدد کی حالت تشویشناک

ہسپتال انتظامیہ کی غفلت،ایک خاتون مریض جاں بحق،متعدد کی حالت تشویشناک

کراچی میں ہسپتال انتظامیہ کی غفلت کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ہے جس میں خاتون مریض کی موت واقع ہوگئی ہے جبکہ ہسپتال کے دیگر مریضوں کی حالت بھی تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں واقع ایک نجی ہسپتال کا عملہ  مبینہ طور پر آئی سی یو کی آکسیجن سپلائی کے والو کو کھولنا بھول گیا جس سے  آئی سی یو میں زیر علاج ناصرہ زاہد کی موت واقع ہوگئی جبکہ دیگر مریضوں کی حالت بھی بگڑ گئی۔

پولیس مریضوں کے لواحقین کی جانب سے ہسپتال کے خلاف مقدمے کے اندراج کا انتظارکررہی ہے، ہسپتال کی تلاشی کے دوران پولیس کو  مختلف کمروں سے باربی کیو پارٹی کے اثرات اور شراب کی خالی بوتلیں بھی برآمد ہوئی ہیں۔

ناصرہ زاہد کے بیٹے وجاہت  نے خبررساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ان کی والدہ کو چند روز قبل چیسٹ انفیکشن کی وجہ سے ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا جہاں ان کی طبیعت سنبھلنے میں نہیں آرہی تھی جس پر ڈاکٹروں نے انہیں آئی سی یو میں شفٹ کردیا تھا۔

وجاہت کے مطابق  جمعے کی صبح ہسپتال کا عملہ آئی سی یو میں داخل مریضوں کو دی جانے والی آکسیجن سپلائی کا والو کھولنا بھول گیا جس کے باعث  میری والدہ کا انتقال ہوگیا۔

وجاہت  کا مزید کہنا تھا کہ آئی سی یو میں داخل تین بچوں ایک خاتون اور  ایک بزرگ کی طبیعت بھی آکسیجن کی عدم فراہمی کے باعث شدید بگڑ گئی، اطلاع ملتے ہی مریضوں کے لواحقین کی بڑی تعداد ہسپتال پہنچ گئی اور انہوں نے انتظامیہ کی غفلت پر شدید ہنگامہ کرنا شروع کردیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہسپتال انتظامیہ نے بجائے مریضوں کے اہلخانہ کی بات سننے کے الٹا ان پر تشدد شروع کردیا ، اس جھڑپ کے دوران میں خود زخمی ہوا ہوں اور میرے ہاتھ پر ٹانکے آئے ہیں۔

لواحقین کے شدید مشتعل ہونے پر ہسپتال عملہ موقع سے غائب ہوگیا جبکہ مشتعل لواحقین نے ہسپتال کی عمارت میں توڑ پھوڑ شروع کردی،  واقعہ کی اطلاع ملتے ہی تیموریہ پولیس اسٹیشن سے  پولیس کی بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر  مظاہرین کو منتشر  کیا۔

مریضوں کے لواحقین کی شکایات سنتے ہوئے پولیس نے ہسپتال کی تلاشی لی جس کے دوران متعدد کمروں سے شراب کی خالی بوتلیں برآمد ہوئیں، تاثر یہ مل رہا تھا کہ واقعہ کی رات ہسپتال کا عملہ شراب اور تکہ پارٹی کے مزے اڑاتا رہا اور کسی کو آکسیجن والو کھولنے کا خیال ہی نہ رہا۔

ناصرہ زاہد کو  کورنگی کے قبرستان میں سپردخاک کردیا گیا ہے ان کے بیٹے وجاہت نے پولیس  حکام سے ہسپتال انتظامیہ کے خلاف کارروائی اور انصاف کی اپیل کی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >