پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے کورونا پیکج کے 1240 ارب کی تفصیلات طلب کرلیں

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے کورونا پیکج کے 1240 ارب کی تفصیلات طلب کرلیں

قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے حکومت سے کورونا پیکج کے 1240 ارب روپے کے خرچ سے متعلق تفصیلات طلب کرلی ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق قومی اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس چیئرمین رانا تنویر حسین کی سربراہی میں ہوا جس میں کورونا سے متعلق غیر ملکی امداد، ویکسین کی خریداری سے متعلق وزارت قومی صحت اور این ڈی ایم اےسے ان کیمرہ بریفنگ طلب کرلی ہے۔

اس موقع پر چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی رانا تنویر نے کورونا بحران کے دوران حکومتی اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس وباء کے دوران حکومت نے اچھا کام کیا ، کورونا کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات پر اطمینان ہے۔

انہوں نے کہا پاکستانی اقدامات کی تعریف عالمی ادارہ صحت نے بھی کی تاہم کورونا فنڈز کے 12 سو ارب روپے کہاں خرچ ہوئے اس حوالے سے سوال ضرور کریں گے۔

اس پر ردعمل دیتے ہوئے دیتے ہوئےایڈیشنل سیکرٹری وزارت خزانہ کا کہنا تھا کہ کورونا پیکج کے 1240 ارب میں غیر ملکی امداد شامل نہیں ہے،ویکسین کی خریداری کیلئے350 ملین ڈالر ادا کیے، کورونا پیکج میں ابھی358 ارب روپے موجود ہیں جو ویکسین کی خریدار میں استعمال ہوں گے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>