افغان طالبان کا معروف کامیڈین کے قتل کا اعتراف : کیا موقف اپنایا ؟

افغانستان میں طالبان اور افغان فورسز کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں، طالبان کی جانب سے دو سو سے زائد اضلاع کا کنٹرول بھی حاصل کرلیا گیا ہے، جبکہ ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے معروف کامیڈین کے قتل کا اعتراف کرلیا ہے، انہوں نے کہا کہ مقامی کامیڈین نذر محمد المعروف خاشہ زوان کے قتل کی تصدیق کی اور کہا کہ ملوث اپنے دو جنگجوؤں کو پکڑ لیا ہے۔

ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ قندھار کے ٹک ٹاکر خاشہ زوان کے طالبان کے ہاتھوں قتل پر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں مقتول کو گرفتار کرنے والے دونوں مسلح افراد طالبان جنگجو تھے،ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بتایا کہ نذر محمد دراصل افغان نیشنل پولیس میں تھے اور طالبان کی ہلاکتوں اور تشدد میں ملوث تھے تاہم انھیں قتل کرنے کے بجائے طالبان کی عدالت میں پیش کیا جانا چاہیے تھا، لیکن نذر محمد کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کرنے کے بجائے سزا دینے والے دونوں طالبان جنگجوؤں کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی ہے۔

اس سے قبل طالبان نے قندھار کے مقامی کامیڈین اور مقبول ٹک ٹاکر نذر محمد المعروف خاشہ زوان کے قتل میں ملوث ہونے کی تردید کردی تھی،افغان طالبان اور افغان فورسز کے درمیان صوبے ہلمند کے مرکزی شہر لشکر گاہ میں لڑائی جاری ہے،جھڑپیں گورنر ہاؤس کے مضافات تک جاری ہیں،طالبان لشکر گاہ کے ایک اور ضلع پرقابض ہوگئے،دوسری جانب کابل سے دو سو افغان ترجمان ، اتحادیوں اور ان کے خاندان کا پہلا گروہ امریکا پہنچ چکا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >