لاہور، مل کی لوہا پگھلانے والی بھٹی میں مزدور گر کر جاں بحق ، مالک تالے لگا کر فرار

لاہور کے علاقے مناواں میں واقع اسٹیل مل کی فرنس میں لوہا پگھلاتے ہوئے مزدور جل کر مر گیا۔

تفصیلات کے مطابق سرگودھا کا رہائشی 30 سالہ ظہیر عباس بھٹی نامی مزدور اسکریپ کو پگھلانے کے لیے بھٹی کے قریب گیا تو حفاظتی حد نہ ہونے کے باعث خود بھی بھٹی میں گر گیا۔

قریب موجود دیگر مزدور ظہیر کو بچانا چاہتے تھے مگر تیز آگ کے باعث وہ کچھ نہ کر سکے اور ظہیر آگ میں جھلس کر جاں بحق ہو گیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ 28 جولائی کو پیش آیا، واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج سامنے آنے پر پولیس اور لیبر ڈیپارٹرمنٹ نے کارروائی کرنے کا سوچا تب تک اسٹیل مل کا مالک فیکٹری کوتالا لگا کر فرار ہو چکا تھا۔

سامنے آنے والی سی سی ٹی وی فوٹیج میں بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ ظہیر اسکریپ لیکر بھٹی کے قریب جاتا ہے جہاں کو حفاظتی اقدامات نہ ہونے کے باعث وہ بھٹی میں گر کر جھلس جاتا ہے۔

دوسری جانب جاں بحق ہونے والے مزدور ظہیر عباس کے لواحقین کا کہنا ہے کہ وہ فیکٹری یا اس کے مالک کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرنا چاہتے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لیے واقعہ کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔

  • ہمارے ملک میں انسانیت کی کمی ھے
    اتنے بڑے بڑے کاروبار کرتے ہیں
    ملازمین کے لئے کچھ بھی نہیں
    کوئی انشورنس نہیں ، کوئی سیفٹی نہیں
    اتنا پیسا کماتے ہیں سب اپنی جیبوں میں

    کوئی انہیں بتاے کے کسی غریب پر احسان کرنے
    سے پہلے اپنے ملازم کو اس کا حق دو

    آج ترقی یافتہ ملکوں میں ترقی تب ممکن ہوئی
    جب انھوں نے مزدوروں اور نچلے طبقے کو ان کا حق دیا
    اور ساتھ لے کر چلے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >