پولیس کی ایک اور کامیابی ، لاہور سے لاپتا 4 بچیاں ساہیوال سے مل گئیں

لاہور سے چار روز قبل چار لڑکیوں کے لاپتہ ہونے کا معمہ بالاخر حل ہوگیا، چاروں لڑکیاں اپنی مرضی سے گھر چھوڑ کر گئی تھیں، پولیس نے ساہیوال سے لڑکیوں کو برامد کرلیا،ہنجروال کے علاقے محلہ نمبرداراں سے تیس جولائی کو چار لڑکیاں لاپتہ ہوئیں،،انعم اور کنزہ پڑوس میں رہنے والی سہیلیوں عائشہ اور ثمرین کے ہمراہ گھر سے نکلیں مگر واپس نہ آئیں۔

لڑکیوں کے لاپتا ہونے پر اہلخانہ نے چار روز تک لاہور کا چپہ چپہ چھان لیا مگر کوئی سراغ نہ ملا،عائشہ اور ثمرین کی والدہ کا کہنا تھا کہ پہلے پولیس نے کچھ نہ کیا میڈیا پر خبر کے بعد پولیس حرکت میں آئی،انویسٹی گیشن پولیس نے تین روز کی جدوجہد کے بعد چاروں لڑکیوں کو ساہیوال سے برآمد کرلیا۔ سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگر کا کہنا ہے کہ بچیاں اپنی مرضی سے گھر چھوڑ کر گئیں۔

 تحقیقات کے دوران پولیس نے محلے دار نوجوان عمر اور رکشہ ڈرائیور ارسلان کو بھی حراست میں لیا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ساہیوال سے بچیوں کو لاہور منتقل کرکے ضروری کارروائی کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا جائے گا۔

لاہور کے علاقے ہنجروال سے پرسرار طور پر لاپتہ ہونے والی4 بچیوں کو رکشہ ڈرائیور نے 30 جولائی کی رات 12 بجےموہلنوال روڈ پر اتارا تھا،بچیوں کے اغواء کا مقدمہ عرفان نامی شخص کی مدعیت میں درج کیا گیا تھا، اس سے قبل پاکپتن سے لاپتا چار بہنیں لاہور سے ملی تھیں،پولیس کے مطابق لڑکیوں نے چچا کے ڈر سے گھر چھوڑا تھا۔

  • چلو اب ان کے چچا کو لمیا پاو پتا نہیں وہ کنجر کیا حرامی پنا کرتا ہے کہ یہ بچیاں خوفزدہ ہوکر گھر سے بھاگ گئیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >