پی آئی اے کا انوکھا اقدام: دوران پروازمنرل واٹر کی بوتل نہیں ملے گی

پاکستان ایئر لائنز انتظامیہ نے دوران پروازوں مسافروں کو منرل واٹر کی فراہمی روکنے کا احکامات جاری کردیئے ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کورونا وباء کے پیش نظر پی آئی اے انتظامیہ نے مسافروں کو منرل واٹر کی بوتلیں فراہم کرنے کا فیصلہ کیا تھا، تاہم اب سامنے آئے ۔

فیصلے کے مطابق انتظامیہ نے تمام بوتلیں اٹھانے کے احکامات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسافروں کو پانی طلب کرنے پر گلاس میں فراہم کیا جائے گا۔

پی آئی اے مینجر فلائٹ سروسز کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے جس کے مطابق اندرون ملک پروازوں میں جہاں سہولت نہ ہو وہاں جہاز پر عملہ مسافروں کو پانی فراہم کرنے کا پابندہوگا۔

ہدایت نامے میں کہا گیا ہے کہ بوتلیں سیٹوں کیساتھ مخصوص جگہ پر ڈیزائن کردہ ایس پی ڈی سی میں رکھی جائیں، ٹرانزٹ اسٹیشنز پر کیٹرنگ عدم دستیابی پر کیبن کریو پانی فراہم کرے گا۔

دوسری طرف سول ایوی ایشن اتھارٹی نے اندورن ملک پروازوں پر سفر کے دوران مسافروں کو کھانا فراہم کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔

ائیر لائنز کو بھیجے گئے ایک مراسلے میں بتایا گیا ہے کہ پابندی ملک میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے باعث عائد کی گئی ہے۔ پہلے سے نافذ فضائی سفری پالیسیاں لاگو رہیں گی۔

  • اچھی بات ھے۔ اسطرح پی آئی اے کو زیادہ بچت ھوتی ھے۔ کھانا بھی مہنگا پڑتا ھے۔مسافروں کو ذلیل کرنے کے لئے ھر بہانہ اپنایا جاتا ھے۔ عقل کے اندھوں کو یہ بات پتہ نہیں کہ کہ بوتل سسٹم گلاس کے مقابلے میں زیادہ مفید ھے۔ لیکن بوتل تھوڑا سا زیادہ خرچ کرتا ھے۔۔ شرم مگر آتی نہیں۔ اب کچھ دنوں کعد پانی پینے پر چارج میں لگا دیںگے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >