ڈسکہ میں درندگی کا ایک اور افسوسناک واقعہ ،7 سالہ طالب علم بدفعلی کے بعد قتل

پنجاب کے شہر ڈسکہ میں پیش آیا دل دہلادینے والا واقعہ، جہاں سات سالہ طالبعلم کو بدفعلی کے بعد اس کی زندگی کا خاتمہ کردیا گیا،ڈسکہ کے ضلع لدھے میں طالبعلم زین علی کی لاش گاؤں کے کھیتوں میں پھینک دی گئی، لاش برآمد ہونے پر علاقہ مکینوں نے پولیس کو اطلاع کردی۔

پولیس نے اطلاع ملتے ہی لاش کو تحویل میں لے کر اسپتال منتقل کردی، جہاں میڈیکل رپورٹ میں طالب علم سے بدفعلی ثابت ہوئی،پولیس نے تحقیقات کا آغاز کیا تو یہ بات سامنے آئی کہ زین علی گزشتہ روز لاپتہ ہوا اور والدین نے بچے کو تلاش کرنا شروع کردیا، ناکامی پر پولیس میں گمشدگی کی رپورٹ درج کروائی جس پراغوا کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا تھا۔

تفتیشی افسر کا کہنا ہے کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد دیگر مقدمے میں دیگر دفعات شامل کی جائیں گی،سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے مشتبہ شخص کو گرفتار کرلیا گیا، جس سے تفتیش جاری ہے، اس سے قبل بھی ملک میں طالبعلموں کے ساتھ زیادتی کے کیسز سامنے آتے رہے ہیں۔

خیبر پختونخوا کے ضلع بٹگرام میں ایڈیشنل سیشن جج نے نو عمر یتیم لڑکے سے زیادتی اور اس کی ویڈیو بنا کر بلیک میلنگ کرنے کا الزام ثابت ہونے پر 2 ملزمان کو 24،24 سال کی قید کی سزاسنائی تھی، جبکہ اسلامی یونیورسٹی میں طالب علم کے ساتھ بھی زیادتی کا کیس سامنے آیا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >