گجرات: اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی دم توڑ گئی، مرکزی ملزم گرفتار

گجرات میں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی دم توڑ گئی جب کہ پولیس نے واقعہ میں ملوث مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گجرات کے علاقے غازی چک میں اجتماعی زیادتی اور لڑکی کے انتقال کے واقعہ کے انکشاف کے حوالے سے ترجمان پنجاب پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق 3 افراد نے 3 ستمبر کی رات غازی چک میں لڑکی کو اغوا کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر اس کی حالت غیر ہونے پہ لڑکی کو پھینک کر فرار ہو گئے۔ متاثرہ لڑکی نے بعد میں دم توڑ دیا۔

جب کہ ترجمان پنجاب پولیس کا کہنا ہے کہ اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کی موت زہریلی گولیاں کھانے سے ہوئی تھی۔ لڑکی کی والدہ کا کہنا ہے کہ میری بیٹی کے ساتھ سلیمان اور اس کے دوستوں نے اغوا کر کے اجتماعی زیادتی کی۔

پولیس کے مطابق لڑکی کی ماں کی درخواست پر تھانہ صدر میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے مگر پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد حقائق سامنے آئیں گے۔ اس سلسلے میں آئی جی پنجاب انعام غنی کا کہنا ہے کہ مقتولہ کے لواحقین کو انصاف کی فراہمی ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنائی جا رہی ہے۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے گجرات زیادتی کے بعد لڑکی کے جاں بحق ہونے کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی او گوجرانوالہ سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ وزیراعلیٰ نے واقعہ میں ملوث ملزمان کی جلد گرفتاری کاحکم دیا ہے۔

عثمان بزدار نے کہا ہے کہ افسوسناک واقعہ میں ملوث ملزمان کو قانون کی گرفت میں لاکر مزید کارروائی کی جائے اور متاثرہ خاندان کو ہر صورت انصاف فراہم کیا جائے۔ وزیراعلیٰ بزدار کی ہدایت پر ملزمان کی گرفتاری کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں۔

    • Do takke ke tattu, aise larhke un maa baap ki parwarish ka nateeja hein , jaise tere khyalat hein.
      Aik crime hoa he, aur tu yaha maryam ki dukan chamka raha he?
      Bakwas admi ye government 3 saal rahi he, rapist ka zehn uski parwarish aur mahol ka nateeja hota he, jo teen saal mein nahi banta.
      Akhri teen sal se pehle pandra saal tere jaise paltu palne vale, muashre se ziadti karte rahe, ye us muashre ka result he.
      Lekin ab agar…..
      Issue ko tere jaise qam akal log jab discuss karein ge to tere jaisi satehi bongian hi marein ge. Shayd teri taleem kam he.
      Smart phones or social media ne kamazkam aik kaam to kya, jinki hesyat tambako ke khokhe pe beth ke chablein marne tak hi thi, unko bhi apni awaz nikalne ka mouqa mil gaya he, isi liye tere jaise dhagge bhi pae jate hein.
      Warna tere jaise zehn ki auqaat nahi ke tere bankne pe koi kaan dharre.
      Ye pakrhe gae, ab insaaf ho ga, aur inko wehshatnak saza di jae gi. Rishwat aur ghareeb ko dabaya nahi jae ga.
      Ye faraq he is government mein aur teri daddu charger company mein.

  • Koi nai … courts and police will let the culprit go after serving 1 or 2 year at most. There is no other way than public hanging to stop these crimes, but seems like there is no will to do it. Until CM ya kisi minister ki bachi say zyadti ho.

  • جسدن بزدار کی بیٹی کو ریپ کیا گیا اس دن ریپسٹ کی پھانسیاں شروع ہوجائیں گی
    کیا اب انصاف کیلئے بزدار کی بیٹی کے ریپ کا انتظار یا دعائیں کی جائیں؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >