گریٹر اقبال پارک کیس، ملزم دوران پیشی ماں کے قدموں میں گرگیا اور معافیاں مانگتا رہا

مینارپاکستان ہراسانی کیس: عدالت پیشی پر ملزم اپنی ماں کے قدموں میں گرپڑا اور رورو کر معافیاں مانگتا رہا

لاہور، مینار پاکستان کے گریٹر اقبال پارک میں 14 اگست کو ٹک ٹاکر عائشہ اکرم کے ساتھ پیش آنے والے بدسلوکی کے واقعہ میں گرفتار ملزموں کی عدالت پیشی کے موقع پر ایک انوکھا واقعہ پیش آیا جب ضلع کچہری میں ایک ملزم اپنی ماں کے قدموں میں گر کر معافیاں مانگنے لگا۔

تفصیلات کے مطابق خاتون ٹک ٹاکر عائشہ اکرم کے کپڑے پھاڑنے اور اسے ہراساں کرنے کے الزام میں گرفتار ملزم افتخار جب اس جگہ سے گزرا جہاں ملزموں کے اہلخانہ ملاقات کیلئے کھڑے تھے تو مذکورہ ملزم اپنی والدہ کے قدموں میں گر کر پیر چومنے لگا اور معافیاں مانگتا رہا۔

ملزم نے اپنی ماں سے کہا کہ میں بے گناہ ہوں میری رہائی کیلئے دعا مانگنا ، مجھے دنیا کی پرواہ نہیں، نجانے مجھے کس گناہ کی سزا مل رہی ہے۔

اس سے قبل بھی کئی گرفتار ملزموں نے کہا ہے کہ وہ بے گناہ ہیں خاتون کو پہچاننے میں غلطی ہوئی ہے کیونکہ وہ اس ویڈیو میں موجود ہی نہیں ہیں۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل عائشہ اکرم نے کیمپ جیل لاہور میں 10 ملزمان کی شناخت کی تھی جن میں سے 4 ایسے لوگ نکلے جو پچھلے 6 ماہ سے 2 سال تک سے جیل میں سزا کاٹ رہے تھے، پولیس نے ان 4 ملزمان کو علیحدہ کردیا تھا

  • Ayesha ko chahye tha k jo jo video mein nazar aaye hyn sirf un k khilaaf karwaee karwati. Aur keh deti k panic ki wajah sy mujhe kisi ka face nhi hy taa k koi innocent L na lag jaiye

  • بےگناہ ہے تو اس کا نمبر وہاں سے کیسے ٹریس ہوگیا؟ اس کیس سے اتنا تو ضرور ہوگیا ہے کہ اب دوبارہ ایسا کوی واقعہ ہونے کا امکنا بنتا ہے تو لوگ صرف تماشہ نہیں دیکھیں گے بلکہ آگے بڑھ کر ایسے لفنگوں کو پکڑ کر قانون کے حوالے کریں گے یا کم از کم انکی چھترول کریں گے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >