آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کیلئے قانون سازی، نواز شریف سمیت اپوزیشن پارٹیز نے اپنی شرائط رکھ دیں

آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کیلئے قانون سازی پر اپوزیشن پارٹیز کی شرائط

آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے لئے قانون سازی، اپوزیشن پارٹیز نے اپنی شرائط رکھ دیں

زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سابقہ وزیر اعظم نواز شریف نے آرمی چیف کی مدت ملازمت اور توسیع کے معاملے پر حکومت کا ساتھ دینے کے لئے چند شرائط رکھی ہیں

نون لیگ کے ایک سینئر رہنما کا کہنا تھا کہ حکمران جماعت نے ان سے چند افراد کے ذریعے رابطہ کیا ہے

میاں محمد نواز شریف نے آرمی چیف کی مدت ملازمت کے لئے قانون سازی کی حمایت کی ہے مگر انہیں توسیع کو قانونی درجہ دینے سے اختلاف ہے

نون لیگ کے ایک رہنما کا کہنا تھا کہ مدت ملازمت میں توسیع کو سپورٹ کرنے سے انکے اپنے بیانئے کی نفی ہوتی ہے

اور مریم نواز کو لندن جانے کی اجازت نہ دینے اور احسن اقبال کی گرفتاری سے حکومت کا ساتھ دینا مشکل ہوگیا ہے

دوسری طرف پیپلز پارٹی نے بھی اس معاملے میں حکومت کو سپورٹ کرنے کے لئے چند شرائط رکھ دی ہیں

ان میں سر فہرست نیب کے اختیارات میں کمی، اعلی عدلیہ میں ججز کا تقرر اور چیف الیکشن کمشنر کی تقرری وغیرہ کے طریقہ کار میں تبدیلی ہے

نون لیگ اور اپوزیشن پارٹیز سے اس مسلے پر مطلوبہ نتائج نہ ملنے پر حکومت نے اب عدالت عظمیٰ میں ریویو پٹیشن دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے

یاد رہے کہ مجودہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی توسیع کے فیصلہ پر عدالت نے چھ ماہ میں قانون سازی کرنے کی مہلت دی تھی


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>