احسان اللہ احسان ، حساس آپریشن کے دوران فرار

تفتیش کے دوران احسان اللہ احسان نے انتہائی حساس اور اہم معلومات فراہم کیں۔ احسان اللہ احسان کی دی گئی معلومات کے نتیجے میں سیکیورٹی فورسز نے نہ صرف تحریک طالبان پاکستان اور جماعت الاحرار کے اندرونِ اور بیرونِ ملک دہشت گرد نیٹ ورکس کو توڑا بلکہ بہت سے دہشت گردوں کو بھی پکڑا-

احسان اللہ احسان کو اپنے جرائم کی سزا ملنا تھی۔ تاہم ٹرائل سے قبل جاری آپریشنز کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے اُس سے تمام اہم معلومات کا حصول ضروری تھا۔ ان معلومات کے نتیجے میں کچھ آپریشنز ابھی بھی جاری ہیں اور سیکیورٹی اداروں کی ایک ایسی ہی کارروائی کے دوران احسان اللہ احسان فرار ہوا۔

سیکورٹی زرائع اس دہشتگردانہ کارروائیوں میں ملوث احسان اللہ احسان اور دیگر تمام مجرموں کو ہر صورت کیفرِ کردار تک پہنچانے کے لیے پر عزم ہیں۔ کالعدم تحریک طالبان کا سابق ترجمان احسان اللہ احسان نے5 فروری2017کو رضا کارانہ طور پر سرنڈر کرتے ہوئے اپنے آپ کو انٹیلی جنس اداروں کے حوالے کیا۔

پاکستانی اداروں کے زیر حراست احسان اللہ احسان کا یہ اعترافی بیان سامنے آیا تھا

  • اسے اعلی حکام نے خود فیملی سمیت بھگایا ہے اور اس کی رہائش کے لئے ترکی میں بندوبست کیا گیا ہے۔ اسے اگر نہ بھگایا جاتا تو اسے سزا دی جانی پڑتی جو کہ احسان اللہ احسان سے معلومات کے بدلے معافی کے وعدے کی خلاف ورزی ہوتی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >