نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے تحت قرضوں کی حد میں 100 فیصد اضافہ

حکومت نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے تحت قرضوں کی حد کو 50 لاکھ سے بڑھا کر 1 کروڑ روپے کردیا ہے۔
خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی خصوصی ہدایت پر نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے تحت ملنے والے قرضوں کی حد کو 100 فیصد تک بڑھادیاگیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر سینیٹر فیصل جاوید نے اپنے پیغام میں یہ اعلان کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے وزیراعظم پاکستان کی ہدایت پر نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے میں قرضوں کی حد میں 100 فیصد اضافہ کردیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قرضوں کی حد میں اضافے کے ساتھ ساتھ حکومت نے مارک اپ ریٹس بھی کم کرکے 3فیصد اور 5فیصدمقرر کردیئے ہیں، اس منصوبے کی نگرانی خود وزیراعظم پاکستان کررہے ہیں۔

فیصل جاوید نے کہاکہ اب 5، 10 مرلہ کے گھروں، فلیٹس، پلاٹ یا پہلے سے موجود پلاٹ پرگھر تعمیر کرنے آسان قرضہ جات لیے جاسکتے ہیں جن کی حد اب 1 کروڑتک بڑھادی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اب خوابوں کی تعمیر اور گھروں کی تقسیم شروع ہوگئی ہے، اب کرایہ کے بجائے نہایت کم قسط دے کر اپنے گھر کے مالک بنا جاسکتا ہےیہ ایک انقلابی قدم ہے، قرضوں کے حصول اور معلومات کیلئے بینکوں سے رابطہ کریں۔

  • This is not just an increase in the loan for the needy but will also lift the construction industry which will be beneficial for the economy. But hopefully the loans will be disbursed in a way that people don’t default on it.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >