سپریم کورٹ نے تین افراد کے قتل کے مقدمے کا فیصلہ جاری کر دیا

سپریم کورٹ نے شیخوپورہ میں تین افراد کے قتل کے مقدمے کا فیصلہ جاری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق تین افراد کے قتل کے الزام میں نامزد ملزم نے ضمانت قبل از گرفتاری کیلئے سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا جس کا تفصیلی فیصلہ سپریم کورٹ کے جسٹس منصور علی شاہ نے سنایا.

عدالت نے فیصلے میں تحریر کیا ہے کہ کسی شخص کو محض مقدمے میں نامزد ہونے پر گرفتار نہیں کیا جاسکتا بلکہ گرفتاری سے قبل ٹھوس وجوہات ہونا ضروری ہیں۔

تفصیلی فیصلے میں کہا ہے کہ پولیس کو قابل تعزیرجرم پرکسی شخص کوگرفتارکرنےکااختیارہے، پولیس کے پاس کسی شخص کی گرفتاری پر معقول وضاحت ہونی چاہیے۔

فیصلے کے مطابق پولیس کوہرشخص کی گرفتاری کاصوابدیدی اختیارنہیں، پولیس گرفتاری کا اختیار رکھنے پر ہر نامزد ملزم کو گرفتارنہیں کرسکتی۔

شفاف ٹرائل کی ہدایت دیتے ہوئے عدالت نے عدالتیں گرفتاری سےقبل ضمانت درخواست پرفیصلےکیلئےشفاف ٹرائل مدنظر رکھیں، گرفتاری سےقبل ضمانت کاعدالتی اختیارپولیس پرچیک کی حیثیت رکھتاہے، پولیس کی بدنیتی، بے قصور ہونے پر نامزد شخص قبل ازگرفتاری ضمانت کا حقدار ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>