ایسا وزیر اعظم نہیں چاہیئے جو مودی کو گھر بلائے، بلاول بھٹو زرداری کا مریم نواز پر طنز

تمام سیاسی جماعتیں قانون ساز اسمبلی کے انتخابات میں کامیابی کے لئے آزاد کشمیر میں انتخابی مہم کے لئے سرگرداں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق انتخابی مہم کے لئے سرگرداں سیاسی جماعتیں ایک دوسرے پر طنز کے تیر برسانے میں مصروف ہیں۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف اور تحریک انصاف کے وفاقی وزرا نے بھی اپنے امیدواران کی انتخابی مہم کے سلسلے میں آزاد کشمیر کا رخ کیا ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری نے حویلی میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن پر طنز کے نشتر برسائے۔ انہوں نے کہا کہ مودی نوازشریف کی دہلیز پر چل کر آتا ہے، ہمیں ایسا وزیراعظم نہیں چاہیے جو شادی پر مودی کو اپنے گھر بلائے اور نہ ایسا وزیر اعظم چاہیے جو مودی کی فتح کے لیے دعائیں کرے۔

بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ پاکستان کے عوام چاہتے ہیں وہ بلی کی طرح نہیں شیروں کی طرح سیاست کریں، چاہتے ہیں وہ اپوزیشن کریں اور ہم بھی کریں تاکہ اس تبدیلی کی حکومت کو بتاسکیں۔

اس سے قبل مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے مظفر آبادکے قریب چھترکلاس میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن اب وہ جماعت نہیں رہی، ن لیگ کو چوری ہوئی سیٹیں نکلوانے اور ووٹ چوری روکنے کا ہنر آگیا ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان نے کشمیر کےلیے دو منٹ کی خاموشی اختیار کرنےکا کہا تھا، آج تک خاموشی اختیار کیے بیٹھے ہیں، نواز شریف نہ صرف کشمیریوں کی جنگ لڑے گا اور آزادی ان کی جھولی میں ڈالےگا۔

مریم نواز نے مزید کہا ’مودی نوازشریف کی دہلیز پر چل کر آتا ہے، کشمیر کا بیٹا نوازشریف آپ کی سب جنگیں لڑے گا۔‘


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >