عمران خان خود کو افلاطون سمجھتے ہیں،مودی سے دوستی کی پینگیں بڑھاتے تھے ۔ شہباز شریف

لندن میں شہباز شریف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا عمران خان مودی سے دوستی کی پینگیں بڑھا رہے تھے جسکا انہیں جواب منفی ملا۔

بھارت میں نئے متنازعہ شہریت بل کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں شہباز شریف نے کہا کہ یہ بل مودی کی ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے یہ وہی مودی ہے جس نے آج سے بیس پچیس سال پہلے گجرات میں مسلمانوں کا قتل عام کیا اور یہاں ہمارے وزیراعظم عمران خان ان سے دوستی کی پینگیں بڑھاتے تھے پھر ایک وقت یہ بھی آیا کہ عمران خان ٹیلی فون کرتے تھے اور مودی سننے سے انکار کر دیتا تھا شہباز شریف نے مزید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بد قسمتی سے عمران کی ترجیح میں معیشت کی بہتری شامل نہیں اور ان کی خارجہ پالیسی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے دوسری جانب ان کی مودی سے دوستی کی پینگیں بڑھانے کی کوشش بھی مکمل طور پر ناکام رہی بلکہ اس کا منفی جواب ملا۔ کشمیر پر بھارتی مظالم کا ذکر کرتے ہوئے شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ کشمیر میں مودی حکومت بد ترین ظلم و بربریت کررہی ہے خارجہ پالیسی چلانا عمران خان کے بس کی بات نہیں۔

کوالالمپور کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کے حوالے سے ایک سوال کے جواب شہباز شریف نے عمران خان کو ایک انا پرست ذہن کا حامل شخص قرار دیا اور کہا کہ یہ یو ٹرن عمران خان کی ذہنی انا پرستی کو ظاہر کرتا جس کی وجہ سے وہ کسی سے مشورہ بھی نہیں کرتے اور اپنے آپ کو افلاطون سمجھتے ہیں تو پھر یہی کچھ ہوتا ہے جو ہوا۔

مریم نواز کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نیازی انتقامی پالیسی پر عمل پیرا ہیں جس میں بد ترین قسم کی فسطائیت ہے مریم نواز کا معاملہ لاہور ہائیکورٹ میں ہے جہاں سے امید ہے کہ انہیں ضرور انصاف ملے گا۔

یاد رہے کہ شہباز شریف نواز شریف کے ہمراہ اس وقت لندن میں موجود ہیں جہاں انہوں نے نواز شریف کے رائیل برومٹن ہسپتال میں دوسرے پیٹ اسکین کے دوران میڈیا سے گفتگو کی شہباز شریف کا اس حوالے سے یہ کہنا تھا کہ دوسرا پیٹ اسکین مکمل ہونے میں چند گھنٹے لگیں گے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>