حکومت کی ناراض ایم کیو ایم کو منانے کی ایک اور کوشش

پاکستان تحریک انصاف کی ایم کیو ایم کو منانے کی دوسری کوشش۔ڈیڈ لاک برقرار
سربراہ ایم کیو ایم خالد مقبول صدیقی کہتے ہیں ایسی جمہوریت جس کے ثمرات عوام تک نہ جاسکیں اس کا فائدہ نہیں وزیر دفاع پرویز خٹک کہتے ہیں کچھ معاملات پر مزید بات چیت کےلئے اگلی ملاقات اسلام آباد میں ہوگی

حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کا وفد ناراض اتحادی جماعت ایم کیو ایم کو منانے کے لیے ایک ہفتے میں دوسری مرتبہ سینیئر رہنما جہانگیر ترین اور وزیر دفاع پرویز خٹک کی سربراہی میں
بہادرآباد مرکز پہنچا جہاں دونوں جماعتوں کے درمیان مذاکرات ہوئے۔

بہادر آباد میں ایم کیو ایم پاکستان کے مرکزی دفتر میں مذاکرات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہا کہ ایم کیو ایم ہمارے اتحادی تھے اور رہیں گے، جلد ہی خوش خبری ملے گی اور کبھی جدا نہیں ہوں گے، اس حوالے سے تھوڑی بہت غلط فہمیاں پیدا ہوگئی تھیں

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ ‘مجھے یقین ہے کہ ہمارے یہاں آنے کو یہ قبول کریں گے اور ہم ان کو واپس آنے کی دعوت بھی دیں گے اور اس کا فیصلہ یہ خود کریں گے کیونکہ کچھ مسائل ہیں جن کو زیر بحث لانا ہے لیکن مجھے یقین ہے کہ ایسا کوئی بڑا مسئلہ رہا نہیں ہے، چھوٹی چھوٹی باتیں بھی حل ہوجائیں گی جلد اسلام اباد میں ملیں گے

یہ خبر بھی پڑھیں :جس نے ملنا ہے ایم کیوایم مرکز میں آکر ملے

سربراہ ایم کیوایم ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے بتایا کہ بات چیت میں واضح پیش رفت ہوئی ہے جو مسائل سندھ کے شہری علاقوں اور کراچی سے وابستہ ہیں اور ان مسائل سے بھی آگاہ کیا تھا جن کی پورے پاکستان کو ضرورت ہے پی ٹی آئی کے وعدوں کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ‘ہمارے درمیان گفتگو ہوئی اور کچھ نکات میں اتفاق ہوا،کچھ کی زبان میں تھوڑی تبدیلی کی، وہ ہمارے مطالبے بن گئے اور پی ٹی آئی نے ان سے اتفاق کیا تو وہ وعدے بن گئے’۔

خالد مقبول صدیقی بولے ہم پریشان اس لیے تھے کہ گزشتہ 11 سال میں سندھ کے شہری علاقوں کے ساتھ معاشی دہشت گردی ہوئی جس کے نتیجے قوم کو نقصان دیا ایم کیو ایم کے سربراہ نے کہا کہ ‘آج بھی بہت حوصلہ افزا اور تیزی سے جو بات چیت ہوئی ہے اس میں قدم آگے بڑھے ہیں، ناراضی کے معاملات نہیں ہیں ‘آنے والے چند مہینوں، چند ہفتوں یا دنوں میں بھی اس حوالے سے واضح پیش رفت آپ سب کو نظر آئے گی


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

>