وزیراعظم عمران خان کیوں سوچتے ہیں کہ مولانا فضل الرحمن کے دھرنے کے پیچھے چوہدری برادران تھے؟

وزارت اعلی کی کرسی نہ ملنے کا دکھ یا کوئی اور وجہ؟اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویزالہٰی ان دنوں وزیراعظم عمران خان سے نالاں نظر آرہے ہیں۔پیپلز پارٹی سرکار کے ساتھ مخلوط حکومت کو اچھا تجربہ قرار دیدیا

مولانا فضل الرحمن کے دھرنے کے بعد عمران خان ق لیگ سے متعلق کیا سوچ رہے ہیں، اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کا بڑا انکشاف

مولانا فضل الرحمن کے دھرنے کے بعد عمران خان ق لیگ سے متعلق کیا سوچ رہے ہیں، اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کا بڑا انکشاف

Posted by HUM News on Friday, January 24, 2020

انہوں نے گلہ کرتے ہوئے کہا کہ مذاکرات کے ذریعے فضل الرحمان سے دھرنا ختم کرایا لیکن حوصلہ افزائی کی جگہ ہم پر شک کیا گیا۔وزیراعظم اتحادیوں کو شک کی نگاہ سے نہ دیکھیں جوبات ہوپہلے تصدیق کیا کریں۔۔پرویز الٰہی کا کہنا تھا کہ عمران خان ملک کیلئے کچھ کرناچاہتے ہیں لیکن وہ کس کے ساتھ مل کر چلنا چاہتے ہیں یہ بڑا سوال ہے، اگر حکومتی ٹیم اچھی نہیں ہے تو یہ عمران خان کیلئے لمحہ فکریہ ہے حکومت کو ڈیڑھ سال ہوگیا ہے وزیراعظم کو سوچنا ہوگا۔انہوں نے وزیراعظم کی جانب سے ق لیگ کو لفٹ نہ کرانے کی شکایت کی۔کہاچوہدری شجاعت جرمنی سے علاج کراکے واپس آئے تو عمران خان نے خیریت دریافت کرنا بھی گوارا نہیں کی

عمران خان کے اردگرد موجود لوگ اتحادیوں سے متعلق شکوک شہبات پیدا کر رہے ہیں، اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کا بڑا دعویٰ

عمران خان کے اردگرد موجود لوگ اتحادیوں سے متعلق شکوک شہبات پیدا کر رہے ہیں، اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کا بڑا دعویٰ

Posted by HUM News on Friday, January 24, 2020

پرویز الٰہی نے کہا کہ وزیراعلیٰ بزدار کو سمجھایا تھا پنجاب میں انتظامی تبدیلیاں نہ کریں، میں نے مشورہ دیا سندھ کی گندم پنجاب آنے دیں جسے بزدار حکومت کی طرف سے روکا گیا، نچلی سطح پر حکومت کا کنٹرول نہیں ہے، پنجاب کی تقسیم کے حق میں نہیں ہیں، صوبے میں مسائل ہیں تو کسی حد تک قصور عثمان بزدار کا بھی ہے
ق لیگ کے رہنما نے مزید کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے ساتھ پنجاب حکومت بنانے کی کوئی بات نہیں ہوئی،(ن) لیگ نوازشریف کے بغیر کچھ نہیں، سیاست اور ووٹ انہی کے ہیں، ۔شہبازشریف کے اختیار میں کچھ نہیں، نوازشریف چاہتے ہیں کہ مستقبل میں سیاسی باگ دوڑمریم نواز سنبھالیں


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

>